اے ایم پی کے صدر عامر ادریسی نے صدر جمہوریہ کو لکھا خط اور موب لنچنگ پر کی کارروائی کی مانگ

Views: 18
Avantgardia

ممبئی 1 جولای، ایسوسی ایشن آف مسلم پروفیشنلس کے صدر عامر ادریسی نے صدر جمہوریہ ہند کو خط لکھ کر موب لنچنگ کے واقعات کو روکنے کے لیے ٹھوس اقدامات کرنے کی مانگ کی ہے۔ خط میں تشویش کا اظہار کرتے ہوئے جھارکھنڈ میں مقتول تبریز انصاری کے قاتلوں پر سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ 
اے ایم پی کے صدر عامر ادریسی نے موب لنچنگ کے واقعات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں ہو رہے ایسے حالات  تشویشناک ہیں۔ ہمارے ملک کا آئین سیکولر ہے جو ملک میں رہنے والے تمام باشندوں کو مکمل آزادی دیتا ہے۔عامر ادریسی نے مزید کہا کہ ہمارے ملک میں مذہبی تشدد برپا کیا جا رہا ہے۔ ملک میں گوركشا اور جے شری رام کے نام کے نعرے نہ لگانے پر اقلیتوں کو جس طرح سے بھیڑ کی طرف سے پیٹ پیٹ کر قتل کیا جا رہا ہے، اس تناظر میں آج پورے ملک میں غصہ ہے۔ دادری کے اخلاق سے شروع ہوئے موت کے اس ننگے ناچ نے اب جھارکھنڈ کے تبریز انصاری کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔ تبریز انصاری کو تو بھیڑ نے پولیس کے حوالے کیا، اس وقت تبریز کی صحت خراب تھی لیکن پولیس کی لاپرواہی کی وجہ سے پولیس حراست میں ہی تبریز کی موت ہو گئی۔ ہندوستان جیسے جمہوری ملک میں گینگ کی شکل میں مذہبی نعرے بازی کرتے ہوئے بے گناہوں کو مارا جا رہا ہے۔ سب سے زیادہ حیرت کی بات تو یہ ہے کہ معاشرے کی اکثریت اس قدر مردہ ہو گئی ہے کہ ایک شخص کو کچھ لوگ مارتے رہتے ہیں اور بڑی تعداد میں معاشرے کے ذمہ دار کھڑے تماشا دیکھتے ہیں. جو ملک کے ماتھے پر کلنک ہے۔عامر ادریسی نے میڈیا کو بتایا کہ ہم نے خط میں لکھا ہے کہ یہ ملک کے حکمرانوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ ملک کو اس مصیبت سے بچائیں اور ایسے گھناؤنے کام کے مجرموں کو سزائے موت دی جانی چاہیئے اور جن لوگوں کو اس طرح کے جرائم کی حمایت کرتے ہیں انہیں بھی سزا دی جائے  اور  انتظامی حکام کے خلاف سخت کارروائی کی جانی چاہیئے جنہوں نے ایسے واقعات کو کنٹرول نہیں کیا اور اپنے  علاقے میں ‏ موب لنچنگ روکنے میں ناکام ثابت ہوئے ہیں۔ آج ملک میں  اقلیتی طبقے پر روز بروز  حملے ہو رہے ہے  موب لنچنگ میں تقریبا 100 سے زیادہ لوگو کو مذہبی تشدد پھیلاتے ہوئے بھیڑ کی طرف سے قتل کر دیا گیا ہے جو کہ انتہائی تشویش ناک ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *

0

Your Cart