فرائض نماز

Views: 33
Avantgardia

مولانا علی احمد قاسمی




جو چیزیں نماز کے اندر فرض ہیں ان کو ارکان نماز کہتے ہیں یعنی فرائض نماز کہتے ہیں ۔
سوال: فرائض نماز کتنی ہیں؟
جواب: فرائض نماز چھ ہیں:
(۱) تکبیر تحریمہ۔
(۲) قیام یعنی کھڑا ہونا۔
(۳) قرأت یعنی قرآن مجید پڑھنا۔
(۴) رکوع کرنا۔
(۵) دوسجدے کرنا۔
(۶) قعدۂ اخیرہ یعنی اخیر نماز میں التحیات پڑھنے کی مقدار بیٹھنا۔
تکبیر تحریمہ
نیت باندھتے وقت اللہ اکبر کہہ کر نماز شروع کرنے کو تکبیر تحریمہ کہتے ہیں ۔ اس تکبیر کے کہنے سے نماز شروع ہوجاتی ہے اور جو چیزیں نماز کے خلاف ہیں وہ تمام حرام ہوجاتی ہیں۔ اس لیے اس کو تکبیر تحریمہ کہتے ہیں ۔ تکبیر تحریمہ سیدھے کھڑے ہوکر کہنا ضروری ہے اگر کوئی بلا عذر جھک کر رکوع میں شامل ہوکر تکبیر تحریمہ کہے گا تو نماز نہ ہوگی۔
قیام
جس شخص کو کھڑے ہوکر نماز پڑھنے کی طاقت ہے اس کے لیے کھڑا ہونا فرض ہے ہاں جو کہ عذرکی وجہ سے کھڑا نہ ہوسکتا ہو اس کے لیے بیٹھ کر یا لیٹ کر نماز پڑھنا جائز ہے۔
فرض اور واجب نماز میں اتنا قیام فرض ہے کہ جس میں فرض قرأت پڑھی جاسکے ، نفل نماز میں قیام فرض نہیں ہے ، بلا عذر بھی بیٹھ کر پڑھنا جائز ہے لیکن آدھا ثواب ملتا ہے۔
قرأت
نماز میں کم از کم ایک آیت پڑھنا فرض ہے خواہ چھوٹی آیت ہو یا بڑی۔
لیکن ایک آیت کے لیے یہ شرط ہے کہ دو حکموں سے مرکب اگر ایک ہی حکم ہو یا ایک ہی دو حرف کی آیت ہے جیسے مدھامَّتان یا ص یا حم تو صرف ان آیتوں کے پڑھنے سے قرأت کا فرض ادا نہ ہوگا۔ فرض نمازوں کی صرف دو رکعتوں میں اور وتر اور سنت و نفل کی سب رکعتوں میں قرأت فرض ہے ۔اگر کسی کو ایک بھی آیت بھی یاد نہ ہو اور نماز پڑھے تو سبحان اللہ یا الحمد للہ قرأ ت کی جگہ پڑھ لے مگر بہت جلد قرآن کی کوئی سورت یا کوئی آیت فرض کی مقدار یاد کرلینا فرض ہے۔اور واجب کی مقدار یاد کرنا واجب ہے فرض اور واجب کی مقدار قرآن شریف یاد نہ کرے گا تو سخت گنہگار ہوگا۔
رکوع
رکوع کے معنی جھکنا ۔ نماز میں قرأ ت کے بعد اتنا جھکنا فرض ہے کہ ہاتھ گھٹنوں تک پہنچ جائے اور مسنون اتنا جھکنا ہے کہ سر اور کمر برابر ہوجائے اور ہاتھ پسلیوں سے جدا رہیں اور گھٹنوں کو دونوں ہاتھوں سے پکڑے۔
سجدہ
سجدہ کے معنی زمین پر پیشانی رکھنا ، نماز میں دونوں سجدے فرض ہیں سجدہ میں ناک اور پیشانی دونوں زمین پر رکھنا چاہیے بلا عذر صرف پیشانی پر سجدہ کرنا مکروہ ہے اور صرف ناک پر بلا عذر سجدہ کرنے سے سجدہ ادا نہ ہوگا۔
قعدۂ اخیرہ
نمازوں کے اخیر میں التحیات کی مقدار بیٹھنا فرض ہے خواہ فرض نماز ہو یا واجب یا سنت یا نفل۔



Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *

0

Your Cart