محمد بن قاسم


بقلم: محمد طارق قاسمی لکھیم پوری 

مظلوم کی آہوں کی کشش تھی کہ عرب سے 
وہ   نیک  صفت   مردِ  جواں   ہند   میں   آیا


اُس  دور  تشدد  میں   ہر اک  سمت  وطن  میں
مجبور  تھی ،مقہور تھی ،  بے بس  تھی رعایا


اُس   رشکِ  مسیحا  نے    مگر   وقت  پہ  آکر
ہر  نقشِ  ستم   سندھ   کے  خطے   سے  مٹایا

وہ   اہلِ  وطن   تو   اسے   اوتار   ہی  سمجھے 
داہر  کی  غلامی  سے جنھیں اُس نے چھڑایا

 

 Website with 5 GB Storage

اپنا تبصرہ بھیجیں