مدرسہ حمیدیہ انوار العلوم ہنوارہ گڈا میں سالانہ اجلاس کا انعقاد

گڈا جھارکھنڈ
مدرسہ انوار العلوم ہنوارہ میں سالانہ اجلاس کا انعقاد عمل میں آیاجس کی صدارت مدرسہ حسنیہ ملکی کے مہتمم مولانا عبد العزیز قاسمی صاحب نے کی اور نظامت کے فرائض مفتی محمد سفیان قاسمی استاذ مدرسہ حسینیہ تجوید القرآن دگھی و صدر جمعیۃ علماء بلاک بسنت رائے گڈا نے انجام دیئے. پروگرام مغرب کے بعد شروع ہوا. ابتدا میں مدرسہ ہذا کے طلبہ و طالبات نے تلاوت، نعت، تقریر اور مکالمے کی شکل میں دلچسپ اور خوبصورت پروگرام پیش کیا اور سالانہ امتحان میں جن طلبہ و طالبات نے امتیازی نمبرات حاصل کئے ان کو خصوصی انعامات اور بقیہ تمام کو تشجیعی انعامات سے نوازا گیا

باضابطہ پروگرام میں قرآن پاک کی تلاوت مفتی و قاری محمد شبیر صاحب ناظم تعلیمات مدرسہ ہذا نے کی رسول گرامی کی شان اقدس میں مداح رسول دانش خوشحال گڈاوی نے گلہاءے عقیدت پیش کئے. اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر جلسہ مولانا عبد العزیز قاسمی صاحب نے کہا کہ علم والوں کا مقام بہت بلند ہوتا ہے اور انسان کی دینی ترقی ہو یا دنیوی ترقی وہ علم کی مرہون منت ہوتی ہے. انھوں نے کہا کہ یہ مدارس دین کے قلعے ہیں اگر ہندوستان میں یہ مدارس نہ ہوتے تو آج ہندوستان کا حال بھی اسپین جیسا ہوتا. لہذا مدارس کی حفاظت کرنا اور مدارس کی تعمیر و ترقی میں حصہ لینا ہمارا دینی فریضہ ہے. ناظم جلسہ مفتی محمد سفیان قاسمی نے کہا کہ لوگ قرآن کی فضیلت کو تسلیم ضرور کرتے ہیں لیکن قرآن کےساتھ جو ہمارا لگاؤ ہونا چاہیے وہ دن بدن مفقود ہوتا جارہا ہے ہمیں قرآن کی تعلیم کو عام کرنے کے ساتھ قرآن کی تعلیمات پر بھی عمل کرنا ہوگا تبھی ہم کامیابی سے ہمکنار ہو سکتے ہیں. اجلاس میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی. مدرسہ ہذا کے مہتمم مولانا محمد زاہد حسین صاحب نے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور دعا کے بعد مجلس اختتام کو پہنچی

 Website with 5 GB Storage

اپنا تبصرہ بھیجیں