ملک میں مودی کی حکومت بننے پر جمہوریت اور آئین کو زبردست خطرہ :صلاح الدین ایڈوکیٹ

قنوج،۸اپریل،آل انڈیا دلت مسلم مورچہ کے قو می صدر صلاح الدین (شیبو) ایڈوکیٹ نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ اکھلیش یادو نے ایکس پریس وے بناکر قنوج سے لکھنؤ کا راستہ آسان کیا۔ڈمپل جیتیں وزیراعظم کے دفتر میں لگی تصویر بدلے گی اور قنوج سے دلی تک نوجوان کے تو روزگار کے راستے کھل جائیں ۔کسانوں کو وقت پر ادائیگی ہوگی اور دلتوں وپچھڑوں کا ریزرویشن بچا رہے گا۔مسلمانوں کو حفاظت،عزت اور شراکت ملے گی۔ ان کے لئے بھی ریزرویشن کے راستے کھلیں گے۔مودی سرکاری کے گذشتہ پانچ سالوں میں کسان، نوجوان، دلت، پچھڑے، مسلمان بری طرح متاثر اور پریشان ہوئے ہیں ۔ظلم کے خلاف مظلوموں کی آواز پر قائم ہوا یہ اتحاد۔ اب یہی متاثر اورپریشان طبقپ مل کر بھاری سے بھاری اکثریت سے ڈپمل یادو کو کامیاب کر مودی حکومت کو باہر کا راستہ دکھائے گا۔




صلاح الدین ایڈوکیٹ نے کہا کہ وزیراعظم نریندرموری نے’’سب کا ساتھ سب کا وکاس‘‘ کا نعرہ اور وعدہ کیا تھا اور یہ کہا تھا کہ بھارتے کے 125کروڑ لوگ میرے اپنے ہیں ۔لیکن پچھلے پانچ سالوں میں جب جب مسلمانوں نے وکاس، تحفظ اور عزت واحترام کی بات کی تو اسے تین طلاق، حلالا، بابری مسجد جیسے مدعوں میں الجھا کر کبھی بیف تو کبھی لوجہاد، کبھی گو رکچھا،کبھی گھر واپسی کے نام پر بری طرح پریشان کیا گیا۔ماب لنچنگ کا نام دیکر فاسسٹ طاقتوں نے کھلے عام ٹارگٹ بناکر اقلیتوں خاص کر مسلمانوں کو بری طرح مارا پیٹا گیا جس سے مسلمانون میں خوف کا ماحول پیدا ہوگیا ہے۔
وزیراعظم نے کہا تھا کہ میری حکومت میں مذہب کے نام پر کسی شہری کے ساتھ تفریق نہیں ہوگی، مگر اس ملک کے پچھلے ستر سالوں سے درج فہرست ذات کا ریزوریشن مذہب کے نام پر دیا جا رہاہے۔ مسلمانوں کے بار بار مطالبہ کرنے کے بعد بھی بی جے پی سرکار دفعہ341میں مذہبی پابندی ہٹانے کا احکامات نہیں صادر فرمارہی ہے۔ جس کی وجہ سے مسلمانوں کی حالت بد سے بدتر ہوتی جارہی ہے۔سپا ۔بسپا۔لوک دل جیسی پارٹیاں جب بھی حکومت میں آئی ہیں تو مسلمانوں کو حکومت میں شراکت، سماجی انصاف اور سماجی برابری اور عزت واکرام نصیب ہوا ہے۔اتحاد اگر اقتدار میں آتا ہے تو دلتوں اور مسلمانوں کو ریزرویشن حاصل ہوسکتا ہے۔




انہوں نے مزید کہا کے مودی حکومت کے جی ایس ٹی اور نوٹ بندی جیسے فیصلوں سے چھوٹے صنعت کا بری طرح ٹوٹ گئے اور نوٹ بندی کی وجہ سے کئی اموات بھی ہوئی ہیں اور پلواماجیسے واقعات یہ ظاہر کرتے ہیں کہ مودی حکومت ہر میدان میں ناکام ثابت ہوئی ہے،۔انہوں نے کہا کہ ملک میں جمہوریت کی حفاظت کرنے والی ادارے ریزروبینک،سی بی آئی،سپریم کورٹ بھی تناؤ محسوس کررہی ہے۔اگر ملک میں دوبارہ مودی حکومت بنتی ہے تو جمہوریت اور آئین کو زبردست خطرہ لاحق ہوگا۔صلاح الدیں شیبو ایڈوکیٹ کے ساتھ انیس احمد ایڈوکیٹ، ا ورانورعالم خاص طور سے موجود تھے۔

 Website with 5 GB Storage

اپنا تبصرہ بھیجیں