نئی دہلی کے کا نسٹی ٹیوشن کلب آف انڈیا میں شائنینگ انڈیا فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام عید ملن پروگرام منعقد

Views: 39
Avantgardia

نئی دہلی،5جولائی(نامہ نگار):
شائنینگ انڈیا فاؤنڈیشن کی جانب سے کا نسٹی ٹیوشن کلب آف انڈیا میں عید ملن تقریب کا انعقاد کیا گیا۔تقریب کاآغاز حافظ غفران نقشبندی کی تلاوت کلام الہی سے ہوا،جبکہ فاؤ نڈیشن کے سرپرست ایم.غازی نے استقبالیہ کلمات پیش کرتے ہوئے مہمانوں کا تعارف کیا۔اس موقع پررُکن پارلیمان ڈاکٹر شفیق الرحمان برق نے اپنی گفتگو میں کہاکہ عید کا تہوار آپس میں ایکتا اور بھائی چارے اور محبت کا تہوار ہے،موجودہ وقت میں تمام ملکی باشندوں کویکجہتی، خیر سگالی اور خوشحالی پر توجہ دینی چاہئے۔ڈاکٹر برق نے مزید کہاکہ موجودہ وقت کیلئے ضروری ہے کہ ملک میں دلوں کا ملن ہو جائے نیزملک کی ترقی امن سے ہی ممکن ہے،ساتھ ہی حکمراں کوئی بھی ہو مگر اس بات کا خیال رکھا جائے کہ کسی کا نقصان نہ ہو۔ جنتا دل یو نائٹیڈ کے سربراہ اور راجیہ سبھا رُکن کے. سی تیاگی نے کہاکہ سیاسی اور سنگین ماحول میں ایسے پروگرام کی اشد ضرورت ہے، جہاں پر سبھی مذاہب کے لوگ تمام گلے شکوے بھلا کر ایک چھت کے نیچے جمع ہو سکیں۔ مسٹر تیاگی نے مزید کہاکہ ہندوستان پوری دنیا میں واحد ایسا ملک ہے جہاں مختلف مذاہب کے ماننے والے ایک ساتھ برسوں سے امن وشانتی کے ساتھ رہتے آئے ہیں اورسبھی لوگ ایک دوسرے کے تیج تہوار ساتھ مناتے ہیں نیز اسی میل جول کو گنگا جمنی تہذیب کہا جاتا ہے،تاحال ضروری ہے کہ گنگا جمنی تہذیب وبھائی چارگی کو باقی رکھا جائے۔آل انڈیا امام آرگنائزیشن کے چیئر مین ڈاکٹر امام عمیر احمد الیاسی نے اپنی تقریر میں کہاکہ عید ملن ہے،ملنا ہے ایک دوسرے سے۔عید،دیوالی اورہولی ملن،ہندوستان کی تہذیب ہے،یہ تہوار آپس میں ایک دوسروں کو جوڑتی ہے۔البتہ مذہب اور عبادت کے طریقے الگ ہو سکتے ہیں مگرانسانیت کا رشتہ اہم ہے،جسے موجودہ وقت میں فروغ دینے کی ضرورت ہے۔راجیہ سبھارُکن مجید میمن نے کہاکہ عید کا تہوار خدا کی طرف سے بندوں کیلئے ایک انعام ہو تا ہے بندوں کو چاہئے کہ اس خوشی میں دوسرے مذاہب کو بھی شریک کرکے اس خوشی کو دُگنی کریں۔مسٹر میمن نے یہ بھی کہاکہ مسلمانوں کو اس طرف توجہ دینی ہے کہ فرائض کی ادائیگی کے سلسلہ میں کسی بھی طرح کو تا ہی نہ کی جائے۔انکا یہ بھی کہناتھا کہ جب تک ملک کا ایک طبقہ خوفزدہ ہے،حکومت ناکام ہی کہلائیگی۔ کانگریسی لیڈر محسنہ قدوائی نے کہاکہ ہمارا ملک امن وشانتی اور بھائی چارگی کا مزاج رکھتا ہے اور ہم ایک دوسرے سے علیحدہ بھی نہیں رہ سکتے ہیں،سبھی مذاہب کے ماننے والے ایک دوسرے کے ساتھ برسوں سے پیار ومحبت کے ساتھ رہتے آئے ہیں،مگر پچھلے کچھ سالوں میں حالات خراب ہوئے ہیں جس سے ملک کا ہر شہری پریشان ہے۔ مولانا آزاد کے پوتے فیروزبخت احمدنے کہاکہ ہندوستانی مسلمان کسی سے بھی نہیں ڈرتا ہے،کیو نکہ اس کو آئین نے ہندوستان میں رہنے کا پوراحق دیاہے۔مسٹر بخت نے یہ بھی کہاکہ ضرورت اس بات کی ہے کہ مسلمان اپنے بچوں کو اعلی تعلیم سے جوڑیں اور اچھے ادارے تعمیر کریں۔ کا نگریس کے قومی ترجمان راشد علوی نے افسوس کے ساتھ کہاکہ ملک کے اندر نفرت بڑھ رہی ہے،محبت ختم ہو رہی ہے،ملک سے محبت کر نے والے شخص کی ذمہ داری ہے کہ اس نفرت کا مقابلہ کریں۔انہوں نے فخر کے ساتھ کہاکہ ہجومی تشدد کے خلاف مظاہروں میں مسلمانوں کے ساتھ برادران وطن بھی برابر کے شریک ہیں،مسلمانوں کو گھبرا نے کی ضرورت نہیں ہے کیو نکہ مسلمانوں کی لڑائی اہل برادر لڑ رہے ہیں۔ مسٹر علوی نے مزید کہاکہ اقوام متحدہ میں لنچنگ کی گونج سنی گئی جس سے ہمارے ملک کی پوری دنیا میں بدنامی ہو رہی ہے،اس مشکل وقت میں اتحاد کاثبوت پیش کر نا ہے۔ خواجہ غریب نواز اجمیرشریف کے صدر امین پٹھان نے کہاکہ پوری دنیا میں اسلام کو بد نام کر نے کی ایک سازش ہورہی ہے،ان سب کے قصور وار ہم خود ہی ہیں،کیو نکہ جو ہمارا کردار تھا اس سے ہم دور ہو تے گئے،اسی لئے ہمیں کرداروعمل کو درست کر نے کی ضرورت ہے،ضروری یہ بھی ہے آنے والی نسلوں کی بہتر تربیت کی جائے۔مسلم مجلس مشاورت کے صدر نوید حامدنے اپنے خطاب میں کہاکہ یہ خوشیوں کو تقسیم کر نے کاموقع ہے،موجودہ وقت میں دوسروں کے ساتھ خوشیاں بانٹنا ہمت کی بات ہے،اپنے سے مجاہدہ کریں اوربرادران وطن کے سامنے نمونہ بن کر پیش ہوں،تاکہ ہندوستانی عوام مسلمانوں کو داد وتحسین کی نگاہ سے دیکھیں اور مسلمانوں کواسلام کی تعلیمات کو سمجھنے کی ضرورت ہے اور اپنے کردار کی اصلاح کرنی ہے۔ ہمالیہ ڈرگس کے چیئر مین ڈاکٹر سید فاروق نے عید کی مبارکباد پیش کرتے ہوئے تمام طبقوں میں اتحاد کا پیغام دیا۔ اختتام پرکنوینر پروگرام ڈاکٹر ایم.پی سنگھ نے تمام شرکا کاشکریہ ادا کیاجبکہ اختتام پر مولانا قاری محب اللہ ندوی نے ملک وقوم کی فلاح وبہبودگی کی دعا کرائی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *

0

Your Cart