نماز کے اوقات

مولانا علی احمد صاحب قاسمی
سوال: فجر کا وقت کب سے کب تک رہتا ہے؟
جواب:فجر کا وقت صبح صادق سے سورج نکلنے کے وقت تک رہتا ہے ۔
سوال: ظہر کا وقت کب سے کب تک رہتا ہے؟
جواب: ظہر کا وقت سورج ڈھلنے کے بعد سے اس وقت تک رہتا ہے جب تک ہر چیز کا سایۂ اصلی کے علاوہ دوگنا نہ ہوجائے ، البتہ ظہر کی نماز گرمیوں میں تاخیر سے اور سردیوں میں جلدی پڑھنا مستحب ہے۔
سوال: عصر کا وقت کب سے کب تک رہتا ہے؟
جواب: عصر کا وقت ظہر کی نماز کا وقت ختم ہونے کے بعد سے سورج غروب ہونے تک رہتا ہے ، البتہ آفتاب میں زردی آنے سے پہلے عصر کی نماز پڑھ لینی چاہیے ۔
سوال: مغرب کا وقت کب سے کب تک رہتا ہے۔
جواب: مغرب کا وقت سورج غروب ہونے کے بعد سے تقریبا سوا گھنتہ رہتا ہے ۔ البتہ مغرب کی نماز وقت شروع ہوتے ہی پڑھنا بہتر ہے۔
سوال: عشاء کا وقت کب سے کب تک رہتا ہے ؟
جواب: عشا کا وقت مغرب کا وقت ختم ہونے کے بعد سے صبح صادق تک رہتا ہے۔
نماز
سوال: نماز اسلام کونسا رکن ہے؟
جواب: نماز اسلام کا دوسرا رکن ہے ۔
سوال: نماز کی اہمیت کیا ہے؟
جواب: نماز اسلام کا ایک اہم رکن ہے جو ہر مسلمان مرد وعورت پر فرض ہے خواہ امیر ہو یا غریب تندرست ہو یا بیمار کمزور ہو یا طاقت ور مقیم ہو یا مسافر۔ نبی اکرم ﷺ کا ارشاد ہے کہ نماز دین کا ستون ہے جس نے نماز قائم کی اس نے دین قائم کیا اور جس نے اسے ترک کیا دین کو ڈھایا۔
سوال: نماز کب فرض ہوئی؟
جواب: نماز ۲۷؍ رجب المرجب ۱۰ ؁ ھ معراج کے موقع پر فرض ہوئی۔
سوال: نماز کے کیا معنی ہیں؟
جواب: نماز کے معنی پرستش ، عاجزی و انکساری کے ہیں۔
سوال: نماز کسے کہتے ہیں؟
جواب: ایک مخصوص طریقے پر اللہ کی عبادت کرنے کا نام نماز ہے۔
سوال: نماز پڑھنے سے کیا فوائد ہیں؟
جواب: (۱) اجرو ثواب ملتا ہے۔
(۲) دنیا کے کاموں میں آسانی ملتی ہے۔
(۳) بے حیائی اور برے کاموں سے حفاظت ہوتی ہے۔
(۴) اللہ تعالیٰ سے محبت بڑھتی ہے۔
(۵) ایمان کو قوت ملتی ہے۔
(۶) اللہ راضی ہوتا ہے۔
(۷) جہنم سے بچ کر جنت میں جاتا ہے۔
(۸) حدیث نبوی ﷺ میں ہے کہ نماز کے لیے مسجد جانے میں ہر قدم پر ایک درجہ بلند کیا جاتا ہے اور ایک گناہ معاف کیا جاتا ہے۔
سوال: نماز پڑھنا کب فرض ہے؟
جواب: جب انسان بالغ ہوجائے۔
سوال: نماز کن لوگوں پر فرض ہے؟
جواب: نماز ہر سمجھ دار بالغ مسلمان مرد و عورت پر فرض ہے۔
سوال: بچوں کو کب سے نماز پڑھنے کے لیے تاکید کرنا چاہیے؟
جواب: بچے جب سات برس کے ہوجائیں تو نماز پڑھنے کی تاکید کرنا چاہیے اور جب دس برس کے ہوجائیں تو نماز نہ پڑھنے پر مارکر نماز پڑھنا چاہیے۔
سوال: دن رات میں کتنی نمازیں فرض ہیں؟
جواب: پانچ نمازیں فرض ہیں: (۱) فجر۔ (۲) ظہر۔ (۳) عصر۔ (۴) مغرب۔ (۵) عشاء۔
سوال: پنچ وقتہ نمازوں میں کتنی رکعتیں فرض ہیں؟
جواب: سترہ رکعتیں فرض ہیں۔
سوال: سترہ رکعتیں کیا کیا فرض ہیں؟
جواب: فجر میں دو رکعتیں، ظہر میں چار رکعتیں، عصر میں چار رکعتیں، مغرب میں تین رکعتیں، عشاء میں چار رکعتیں۔
سوال: پنج وقتہ نمازوں میں کتنی رکعتیں سنت ہیں؟
جواب: پنج وقتہ نمازوں میں دس رکعتیں سنت مؤکدہ ہیں۔
سوال: پنج وقتہ نمازوں کی رکعتیں کیا کیا ہیں؟
جواب: فجر میں کل چار رکعتیں ہیں: دو سنت مؤکدہ پھر دو فرض۔
ظہر میں کل بارہ رکعتیں ہیں : چار سنت مؤکدہ، پھر چار فرض پھر دو سنت مؤکدہ، پھر دو نفل۔ عصر میں کل آٹھ رکعتیں ہیں: چار سنت غیر مؤکدہ، پھر چار فرض۔ مغرب میں کل سات رکعتیں ہیں : تین فرض، پھر دو سنت مؤکدہ، پھر دو نفل۔ عشاء میں کل سترہ رکعتیں ہیں : چار سنت غیر مؤکدہ، پھر چار فرض، پھر دو سنت مؤکدہ، پھر دو نفل پھر تین وتر، پھر دو نفل۔ جمعہ میں کل چودہ رکعتیں ہیں: چار سنت مؤکدہ، پھر دو فرض، پھر چار سنت مؤکدہ، پھر دو سنت مؤکدہ، پھر دو نفل۔

 Website with 5 GB Storage

اپنا تبصرہ بھیجیں