جامع مسجد جہاز قطعہ میں روحانی مجلس کا انعقاد تکمیل قرآن کی دعا میں لوگوں نے صدائے آمین بلند کی

ریاست جھارکھنڈ کا مشہور علمی گاوں جہاز قطعہ میں ، رمضان کی ستائیسویں رات کو شب قدر کی مناسبت سے جامع مسجد میں تکمیل قرآن پروگرام کیا گیا، جس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا محمد انعام الحق قاسمی لائبریرین دارالعلوم وقف دیوبند نے کہا کہ اللہ قرآن میں زمانے کی قسم کھاکر یہ کہا ہے کہ دنیا کے سبھی انسان گھاٹے میں ہیں، اگر اس گھاٹے سے بچنا چاہتے ہیں، تو ایمان کے ساتھ عمل صالح، اور حق و صبر کی تلقین کی ضروری ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ رمضان ایک مقدس مہینہ ہے، اس مہینہ سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھانے کی فکر کرنی چاہیے۔ مولانا محمد یاسین جہازی جمعیت علمائے ہند نے اپنے خطاب میں کہا کہ قرآن ایک ایسی کتاب ہے ، جو قوموں کو عروج بھی عطا کرتا ہے اور زوال کا مزہ بھی چکھا دیتا ہے۔ انھوں نے سلسلہ خطاب جاری رکھتے ہوئے کہا کہ آج پوری دنیا میں مسلمانوں کی ذلت و پستی کی وجہ یہی ہے کہ قرآن نے انھیں ذلیل و رسوا کیا ہے ۔ اگر عروج و سربلندی چاہتے ہیں، تو قرآن سے وابستہ ہونا پڑے گا۔ اس کے بعد امام صاحب کی رقت آمیز دعا پر حاضرین محفل نے آمین کہی۔ یہاں پر دو حافظو ں : حافظ محمد خالد اور حافظ محمد صدیق ابن محمد اسرائیل نے مشترکہ طور پر تراویح پڑھائی۔

ستائیسویں شب کو ایک دوسری جگہ پر بھی خواتین کی بھی تکمیل قرآن ہوئی، اور اس کے بعد ایک مختصر  پروگرام ہوا، جس میں مولانا محمد انعام الحق قاسمی، مولانا محمد یاسین جہازی اور قاری عظیم الدین صاحبان نے خطاب و دعا کرائی۔ معلومات کے لیے عرض کردیں کہ جناب حافظ غلام رسول صاحب کے مکان پر سالہا سال سے محلہ کی خواتین بعد نماز عشا جمع ہوتی ہیں اور در پردہ حافظ قرآن سے قرآن سننے کا اہتمام کرتی ہیں، جس سے خواتین میں دینی رجحانات اور کلام پاک سے لگاو کا جذبہ بیدار ہوتا ہے۔

 Website with 5 GB Storage

اپنا تبصرہ بھیجیں