روزہ پر پانچ خصوصی انعامات

محمد یاسین جہازی جمعیت علمائے ہند
9871552408

اللہ تعالیٰ نے امت محمدیہ کے روزہ داران کے لیے پانچ خصوصی انعامات رکھے ہیں:
(۱) روزہ داروں کے منھ کی بو اللہ کے نزدیک مشک سے زیادہ پسندیدہ ہے۔
(۲) روزہ داروں کے لیے افطار کرنے تک فرشتے حتی کہ مچھلیاں دعائے مغفرت کرتی ہیں۔
(۳) روزہ داروں کے لیے روزانہ جنت سجائی جاتی ہے۔
(۴) روزہ داروں کو شیاطین کے مکرو فریب سے محفوظ رکھنے کے لیے انھیں قید میں ڈال دیا جاتا ہے۔
(۵) رمضان کی آخری رات میں سبھی روزہ داروں کی مغفرت عام کردی جاتی ہے۔ 
یہ انعامات صرف امت محمدیہ کے لیے مخصوص ہیں۔ اس سے پہلے کی کسی بھی امت کے لیے یہ انعامات نہیں تھے، اس لیے اس کی قدر کرتے ہوئے ہمیں روزہ کو اس کے آداب کے ساتھ رکھنے کی کوشش کرنی چاہیے۔ اللہ تعالیٰ ہمیں رمضان کی قدر کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔ 
حوالہ
عَنْ أَبِي ھریْرَۃَ، عَنِ النَّبِيِّ صَلّی اللَّہُ عَلَیہِ وَسَلَّمَ، قَالَ: ” أُعْطِیَتْ أُمَّتِي خَمْسَ خِصَالٍ فِي رَمَضَانَ لَمْ تُعْطَہُ أُمۃٌ قَبْلَھُمْ: خُلُوفُ فَمِ الصَّاءِمِ أَطْیَبُ عِنْدَ اللَّہِ مِنْ رِیحِ الْمِسْکِ، وَتَسْتَغْفِرُ لَھُمُ الْمَلاءِکَۃُ حَتّیَ یُفْطِرُوا، وَتُصَفَّدُ فِیہِ مَرَدَۃُ الشَّیَاطِینِ، فَلا یَخْلُصُونَ إِلَی مَا کَانُوا یَخْلُصُونَ فِیہِ إِلَی غَیْرہِ، وَیُزَیِّنُ اللَّہُ عَزَّ وَجَلَّ فِیہِ فِي کُلِّ یَوْمٍ جَنَّتہُ، ثُمَّ یَقُولُ: یُوشِکُ عِبَادِيَ الصَّالِحُونَ أَنْ یُلْقُوا عَنْھُمُ الْمُؤْنَۃَ وَالأَذَی، وَأَنْ یَصِیرُوا إِلَيَّ، وَیُغْفَرُ لَھُمْ فِي آخِرِ لَیْلَۃٍ، قِیلَ: یَا رَسُولَ اللَّہِ صَلیَ اللّہُ عَلَیہِ وَسَلَّمَ! ھِيَ لَیْلَۃُ الْقَدْرِ؟ قَالَ:’’ لا، وَلَکِنْ إِنَّمَا یُوَفّی الْعَامِلُ أَجْرَہُ إِذَا قَضَی عَمَلَہُ۔ (مسند احمد، باقی سند المکثرین، سند ابی ھریرۃؓ) 

 Website with 5 GB Storage

اپنا تبصرہ بھیجیں