اہم خبریں

آزادی کے پر جوش نعروں سے دہل اٹھا گڈا کا میلہ میدان

گڈا ضلع میں این آر سی اور سی اے اے کے خلاف زبر دست احتجاجی مظاہرہ

گڈا جھارکھنڈ/ رپورٹ : محمد سفیان القاسمی ایڈیٹر جہازی میڈیا جھارکھنڈ

گڈا کے میلہ میدان میں این آر سی اور سی اے اے کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ ہوا، اس مظاہرہ میں ہندو مسلمان اور آدی واسیوں کی زبردست بھیڑ تھی، مظاہرہ میں سبھی مذاہب اور سبھی طبقات کے لوگ شامل تھے اور اس پروگرام میں مذہبی رہنماؤں کے ساتھ سیاسی و سماجی لیڈران کا پر زور خطاب ہوا،پورنیہ سے تشریف لائے سابق ایم پی پپو یادو نے اپنے خاص لہجے و اسٹائل میں سرکار اور میڈیا سے کئی سوالات کئے، انھوں نے کہا کہ ابھی یہ لڑائی کی شروعات ہے اور ہم سمودھان بچانے کی اس لڑائی میں اپنی پوری توانائی صرف کر دیں گے، انھوں نے کہا کہ ہندوستان سے گنگا جمنی تہذیب کو ختم کر کے ایک خاص تہذیب مسلط کرنے کی پالیسی کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے، اپنے خطاب کے بعد انھوں نے آزادی کے نعرے لگواءے جس سے پورا میلہ میدان لرز اٹھا.

سنجے یادو نے کہا کہ ہم فسطائی طاقتوں سے پہلے سے لڑائی لڑ رہے ہیں اور آگے بھی پوری قوت کے ساتھ ہماری لڑائی جاری رہے گی، پردیپ یادو نے کہا کہ ہم نے جھارکھنڈ اسمبلی میں بات رکھی تھی کہ کیرالہ سی اے اے کے خلاف تجویز پاس کرنے والی پہلی ریاست ہے اور جھارکھنڈ دوسری ریاست بننی چاہیے اور مجھے یقین ہے کہ اگلی مرتبہ جب فروری میں اجلاس کا سیشن ہوگا تو اسمبلی میں سی اے کے خلاف تجویز رکھی جاءےگی، دپیکا پانڈے کہا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس کی کوشش یہ ہے کہ وہ یہاں کے لوگوں کو ایک دوسرے سے لڑاکر انگریز کی طرح راج کرتے رہیں مگر ہم نفرت کی اس سیاست کو نہیں چلنے دیں گے، اس کے ساتھ ہی لوبین ہیمرین فرقان انصاری، دنیش یادو، سنت لال مرمو، جے کمار، احتشام، ارون سہاءے اور اقرار الحسن وغیرہ کا پر زور خطاب ہوا.

اس موقع پر مفتی سفیان ظفر قاسمی گڈاوی نے کالے قانون کے خلاف اپنی پر جوش نظم پڑھی. پروگرام کی صدارت فرقان انصاری نے کی جبکہ نظامت کے فرائض مولانا یاسین صاحب نے انجام دیئے، اس پروگرام میں قاری فیروز، ڈاکٹر رستم، پرنسپل نذیر، عبد القیوم انصاری، مولانا ریاض، مولانا حامد الغازی ،مفتی نظام الدین ،مولانا تاج الدین ،مفتی عبد اللہ، قاری وسیم مفتی اقبال مفتی زاہد ،عالم گیر، احتشام، انظر ، مولانا قمرالزماں ،مولانا معین الحق فیضی اور سلمان ریاض بطور خاص شریک تھے

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close