اہم خبریں

اردو کی عردوع

این سی پی یو ایل کے ڈائریکٹرکی خود ستائی کی پول کھولتی ادارے کی ویب سائٹ؛

اسسٹنٹ ڈائریکٹر کمل سنگھ کا نام ویب سائٹ پر’پاکستان کمال سنگھ’ اور ڈائریکٹر شیخ عقیل کا نام املا شیخ اکیل ہے درج

نئی دہلی : (اے ٹی این این ) حکومت ہند نے اردو زبان کے فروغ کے لیے ملک کا سب سے بڑا ادارہ قومی کونسل برائے فروغ زبان اردو کی تشکیل اس مقصد سے کی کہ ملک میں موجود ایک بڑی اردو آبادی اس ادارے کے تعاون سے اردو زبان کے احیا ، تحریک وترغیب سے مستفید ہو سکے، اور اس کے ذریعہ چلائی جا رہی اسکیموں اور منصوبوں سے اردو کا فروغ کر سکے۔

تاہم اردو کونسل اس مقصد میں کتنی کامیاب ہے اور کتنی نہیں اس بحث سے بالاتر کچھ ایسی باتیں بھی ہیں جو کونسل کے ڈائریکٹر اور وہاں موجود افسران کو دھیان میں رکھنی چاہئے۔ تاکہ انہیں ہدف ملامت نہ بننا پڑے۔

اسی ہفتے کونسل کے ڈائریکٹر شیخ عقیل نے ایک ڈیجیٹل چینل کو انٹرویو دیا ہے جس میں نامہ نگارنے ایک سوال یہ بھی کیا کہ کونسل کو ٹیکنالوجی سے جوڑنے کی کوشش سست روی کا شکار ہے اس کے جواب میں ڈائریکٹر صاحب کہتے ہیں کہ’ نہیں ، کوئی تاخیر نہیں ہو رہی ہے ہم موبائل ایپ تیار کر رہے ہیں ہم دنیا بھر کے مواد انٹرنیٹ پر ڈال رہے ہیں تاکہ لوگ استفادہ کر سکیں ‘۔ ڈائریکٹر کی ایسی حوصلہ افزا باتیں جان کر آپ بھی خوش ہو گئے ہوں گے ۔ ہمیں بھی خوشی ہوئی لیکن جب اس کی ریسرچ کے لیے ایشیا ٹائمز ٹیم این سی پی یو ایل کی ویب سائٹ تک پہونچی اور اس کے برقی صٖفحات کودیکھا تو منظر نامہ بے حد تشویش ناک تھا ۔

اول یہ کہ چونکہ یہ ادارہ اردو کے فروغ کے لئے ہے ، اس لئے ویب سائٹ میں ترجیح اردو کی ہونی چاہئے۔ یعنی صارفین جب اس ویب سائٹ پر جائیں توپہلے ان کے سامنے اردو ویب سائٹ کھلے ۔ ہاں اس کے بعد انگریزی ہندی یا اور کوئی زبان میں ہو تو بہت بہتر۔ یہ ہونا بھی چاہیے تاکہ دوسری زبانوں میں بھی این سی پی یو ایل کا تعارف ہو ۔

دوسرے یہ کہ ویب سائٹ پر کوئی مواد ڈالنے سے قبل اسے بغور پڑھ لیں۔ یہ نشاندہی اس لئے کی جا رہی ہے کہ جب ویب سائٹ پر ڈائریکٹر اور دیگر افسران کے بارے میں جانکاری کا کالم کھولا جاتا ہے تو یہ مزاح نہیں بلکہ مذاق کا سامنا کرنا پڑ جاتا ہے ۔ جیسے آرٹی آئی کے کالم نمبر12۔1 میں ڈائریکٹر کا نام عقیل کی جگہ اکیل درج ہے۔ یعنی ڈائریکٹر صاحب اپنے نام کا تلفظ جس طرح سے کرتے ہیں اسی طرح لکھ بھی دیا گیا ہے۔

· دوسرے انگریزی میں درج

· Address, telephone numbers and email ID of each designated official.

کا اردو ترجمہ ہر نامزد سرکاری ، ایڈریس، ٹیلی فون نمبر اور ای میل کی شناخت کیا گیا جو جہالت کی دلیل ہے۔

اسی طرح

Shri Kamal Singh Public Information Officer Assistant Director (Admn.)

کا ترجمہ پاکستان کمال سنگھ کیا گیا ہے جس مذاق پر خود اسسٹنٹ ڈائریکٹر کمل سنگھ بھی نہیں ہنس پائیں گے بلکہ خوفزدہ ہو جائیں گے۔

اسی طرح کی ایسی کئی فاش غلطیاں ہیں جو اس ادارہ کی تمام بڑی بڑی باتوں اور خود ستائی کی پول کھولتی نظر آتی ہیں

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

یہ بھی پڑھیں
Close
Back to top button
Close
%d bloggers like this: