مضامین

اسلام خواتین کے تقدس اور وقار کا محافظ

زیبا انجم ترکما ن گیٹ، دہلی

مکرمی!
پیغمبر محمد صلی اللہ علیہ وسلم فرماتے ہیں کہ اللہ تعالیٰ نے قران مجید میں فرمایا ہے’اللہ تعالی کی نشانیوں میں سے یہ ہے کہ اس نے تمہارے لئے تمہاری ہی جنس سے بیویاں بنائی ہیں، تاکہ ان کے پاس سکون حاصل کرو اور تمہارے درمیان محبت اور رحمت پیدا کردی ہے، یقینا اس میں ان لوگوں کیلئے بہت سی نشانیاں ہیں جو غوروفکر کرتے ہیں‘۔ اور قرآن میں دوسری جگہ آیاہ’اور عورتوں کے ساتھ مہربانی اور بھلے طریقہ سے زندگی گزارو‘۔ اس لئے قرآن کی روشنی میں تمام لوگوں کا فریضہ ہے کہ خواتین کے ساتھ ہمیشہ کھڑے ہوں ان کے وقار اور عصمت وعزت کے تحفظ کیلئے۔ علاوہ ازیں ان پر جنس کی بنیاد پر کسی طرح کا تشدد خواہ وہ ذہنی ہو، جذباتی ہو، نفسیاتی ہو، زبانی ہویا جسمانی ہویہ تمام گھناؤنے جرائم اور روح فرسا ہیں جیسے کہ زنا بالجبرایک بدترین جرم ہے۔
مذکورہ بالا تمام احکامات اور ہدایتوں کی روشنی میں تمام لوگوں کی ذمہ داری ہے کہ ایسے جرائم کے ارتکاب کرنے والوں کی سزا اتنی سخت ترین ہونی چاہئے کہ وہ دوبارہ ایساکرنا تو درکنار اس کو کرنے کی سوچ بھی نہ سکیں۔اس سلسلے میں لازم شرط ہے کہ نہ صرف خواتین کے ساتھ یکجہتی کیلئے ہرشخص کندھے سے کندھا ملاکر کھڑا ہوبلکہ ان کے ساتھ برائی کرنے والوں کیخلاف پوری طرح سے مہم چھیڑی جائے۔ اسلام نے ہمیشہ خواتین کو عظیم عزت اور وقار دیا ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ ان کے ساتھ عزت اور احترام کا معاملہ کیا جائے، اس لئے کہ سماج کو ایک بہترین شکل دینے میں خواتین کا کردار جزو لاینفک ہے۔وہ آنے والی نسلوں کو سنوارنے میں اہم رول ادا کرتی ہیں اور وہ ایک بہتر سماج کی تعمیر میں رول ماڈل کی حیثیت رکھتی ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: