مضامین

انتہائی ذلت آمیز اور رسوا کن شکست

*انتہائی ذلت آمیز اور رسوا کن شکست*

1764 میں بننے والی امریکہ کی ساتویں قدیم یونیورسٹی (Brown University) کی تازہ ترین رپورٹ کے مطابق 2001 سے 2021 تک افغان جنگ کے دوران 30177 امریکی فوجی خود کشی کر چکے ہیں۔ جنگ کے دوران امریکی، نیٹو کی چالیس اقوام اور بلیک واٹر کے مارے جانے والے فوجیوں کی تعداد 7386 ہے ۔ جبکہ زخمی ہونے والوں کی تعداد 20666 ہے۔
امریکی محکمہ دفاع کی 2020 کی رپورٹ کے مطابق تقریباً 22 کھرب 15 ارب 70 کروڑ ڈالر سے زائد اس لاحاصل جنگ کی نذر ہو چکے ہیں۔۔۔جو زخمیوں کے علاج معالجے الاؤنس وغیرہ کے علاوہ ہیں۔۔۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔براؤن یونیورسٹی کی ریسرچ رپورٹ کے مطابق امریکی حکومتوں نے افغان جنگ کے لئے اپنی تاریخ کا سب سے بڑا قرض لیا اور اس قرض کے سود کے لئے اب تک شاید 300 ارب ڈالر سے زائد کی ادائیگی کر چکا ہے۔ رپورٹ کے مطابق ٹوئن ٹاورز اور پینٹاگان (امریکی محکمہ دفاع) پر حملے کا انتقام لینے کے لئے ایک لاکھ امریکی اور اکتالیس 41893 لاکھ1 اتحادی فوجوں کو لیکر افغانستان پر حملہ آور ہوا ۔ لیکن 20 سال گزرنے کے بعد امریکہ اور اس کے 40 اتحادیوں نے کچھ حاصل نہیں کیا (بلکہ تاریخ کی ایک عبرت و شرمناک شکست کے ساتھ رات کے اندھیرے میں فرار ہوئے). *براؤن یونیورسٹی کی ریسرچ رپورٹ کے مطابق افغان جنگ کی وجہ سے امریکی فوجیوں میں خودکشی کا رحجان گذشتہ 20 سالوں میں سب سے زیادہ ہے جو تیزی کے ساتھ مزید بڑھتا جا رہا ہے۔*
*اس جنگ کے نتیجے میں خودکش کرنے والے 24 فیصد ایسے فوجی تھے جن کی بیویوں نے انہیں طلاق دے دی۔ رپورٹ کے مطابق ان خودکشیوں کے زمہ دار امریکی حکومت اور امریکی معاشرہ ہے۔*
اپنی رپورٹ میں ہوشربا انکشاف کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ *افغانستان میں جانے والے 60 فیصد فوجی یہ نہیں جانتے تھے کہ وہ کس مقصد کے لئے افغانستان آئے ہیں۔*
( معزز مسلمانو! اب سمجھ آیا کہ صلیبی، یہودی، ہندو، ایرانی اور روسی میڈیا، سیاست دان مذہبی رہنما اور ملٹری کمانڈرز کیوں اسلام ( قرآن و سنت) اور جہاد کو دہشت گردی سے منسوب کرتے ہیں کیونکہ جہاد سے اسلام (قرآن وسنت) کا غلبہ والے نظام آتا ہے اور باطل قوتیں اور ان کے فاشسٹ نظریات مغلوب ہوتے ہیں۔

دفاعی تجزیہ کار:ولید

منقول از: "اسلام غالب آئے گا”

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: