مضامین

ایس آئی او نے مہاراشٹر حکومت سے طلبہ کیلئے یونیورسٹی داخلہ فیس اور امتحان فیس میں 50٪ چھوٹ کا مطالبہ کیا

ایس آئی او نے مہاراشٹر حکومت سے طلبہ کیلئے یونیورسٹی داخلہ فیس اور امتحان فیس میں 50٪ چھوٹ کا مطالبہ کیا

ممبئی، 21 جون (پریس ریلیز) اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا، مہاراشٹر ساؤتھ زون کے وفد نے مہاراشٹر کے وزیر برائے اعلی و تکنیکی تعلیم، اُدے سامنت سے ملاقات کی اور یونیورسٹیز میں داخلے اور امتحان کی فیس میں رعایت دینے کے بارے میں گفتگو کی۔

کووڈ-19 وبا نے سماج کے سبھی طبقوں کو متاثر کیا ہے جس کی وجہ سے مالی مسائل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ لاکھوں لوگوں نے اپنی ملازمتیں کھو دی ہیں جس کے باعث وہ کمانے اور اپنے کنبہ کا سہارا بننے سے قاصر ہیں۔

طلبہ تنظیم ایس آئی او نے آنلائن تعلیم کے تعلق سے ریاستی حکومت کے فیصلے کا استقبال کیا لیکن اس بات پر تشویش کا اظہار کیا کہ کیمپس اور دیگر سہولیات بند ہونے کے باوجود داخلہ اور امتحانات کی مکمل فیس ادا کرنا، ایک عام آدمی کے لیے مشکل ثابت ہوگا۔

وفد میں شامل ایس آئی او مہاراشٹر ساؤتھ زون کے جوائنٹ سیکریٹری مصدق المعید نے وزیر سے کہا کہ کووڈ-19 کی وجہ سے عام آدمی مالی مسائل سے گزر رہا ہے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ ایسے حالات میں طلبہ اور والدین سے بڑی فیس نہیں لی جانی چاہیے۔

ایس آئی او ساؤتھ مہاراشٹر نے وزیر برائے اعلی تعلیم و تکنیکی تعلیم کے ساتھ گفتگو میں کووڈ-19 وبا کی وجہ سے پیدا ہوئے طلبہ کے مالی مسائل پر روشنی ڈالی اور آئندہ تعلیمی سال میں داخلہ فیس اور امتحان فیس میں 50٪ تک چھوٹ دینے کا مطالبہ کیا۔ وزیر ادے سامنت نے ایس آئی او کے وفد کو یقین دلایا کہ بروز بدھ، مہاراشٹر فیس ریگولیٹنگ اتھارٹی کے ساتھ میٹنگ میں اس مسئلہ کو پیش کیا جائے گا اور ضروری اقدامات کیے جائیں گے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

یہ بھی پڑھیں
Close
Back to top button
Close
%d bloggers like this: