اہم خبریں

بسنت رائے بلاک میں جمعیت کے بینر تلے ہوا جگہ جگہ مظاہرہ

لوگوں نے ہاتھ اٹھاکر کہا کہ CAB آئین ہند کے خلاف

جمعیت علمائے ہند کی ہدایت کے مطابق 13 دسمبر 2019 بعد نماز جمعہ بسنت رائے بلاک کے درجنوں گاوں میں CAB کے خلاف پرامن اور خاموش احتجاج کیا گیا، جہاز قطعہ کی جامع مسجد کے سامنے مولانا محمد یاسین جہازی کی قیادت میں ایک منظم مظاہرہ کیا گیا، جس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا ثناء الحق قاسمی نے لوگوں کو بتایا کہ حکومت یہ چاہتی ہے کہ لوگوں کو ان کے نام سے شہریت دے، جو ہمیں منظور نہیں اور یہ سراسر دستور ہند کے خلاف بھی ہے، جس میں مذہب کی بنیاد پر بھید بھاو کو روا نہیں رکھا گیا ہے۔ مولانا محمد یاسین جہاز ی نے کہا کہ حکومت مذہب کے نام پر بھارتیوں کو تقسیم کرنا چاہتی ہے اور انگریزوں کی پالیسی کو دوہراکر بھارت کو نفرت و تشدد کی آماجگاہ بنانا چاہتی ہے، جو سراسر بھارت کے آئین کے ساتھ دھوکہ ہے۔ آخر میں کیب کے خلاف سب لوگوں نے ہاتھ اٹھا کر اپنی ناراضگی اور غصہ کا اظہار کیا۔
مدرسہ اسلامیہ رحمانیہ جہاز قطعہ میں مفتی محمد نظام الدین قاسمی کی قیادت میں ایک پر امن احتجاج کا اہتمام کیا گیا جس میں این آر سی اور سی اے بی کے بھیانک نتائج پر سیر حاصل گفتگو کی جس پر سبھی لوگوں نے بیک آواز اس کی مذمت کی ۔ دونوں جگہوں پر لوگ سر پر کالی پٹی باندھے ہوئے تھے اور اس بل کے خلاف پرامن ناراضگی کا اظہار کر رہے تھے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close