اہم خبریں

بہکاوا ہے یہ بہکاوا

ن العابدین ندوی دارالعلوم امام ربانیؒ، نیرل ۔ مہاراشٹر

جھوٹوں سے بچنا اور بچتے رہنا تقاضا وقت بھی ہے اور دائمی عقل مندی بھی ، اس لئے کہ جھوٹا انسان خواہ وہ کسی شکل اور بھید میں ہو اپنے مقصد کی تکمیل کے لئے کسی بھی حد تک جا سکتا ہے اور کوئی بھی بات کہہ سکتا ہے ،یہ ایسی گندی خصلت ہےجس کا عادی ہر غلط کام انجام دینے کی ہمت رکھتا ہے ، پچھلے دنوں این آر سی کے متعلق وزیر داخلہ امت شاہ کا بیان اس کی ایک تازہ مثال ہے ، یہ وہ لوگ ہیں جن کی حکومت بلکہ ان کی زندگی جھوٹ کے سہارے ٹکی ہوئی ہے ، ان کی کوئی بات بغیر جھوٹ کے مکمل ہو ہی نہیں سکتی ، اس بات کو سمجھنے اور سمجھانے کے لئے بس اتنا ہی کافی ہے کہ سارا ملک اس کی سزا بھگت رہا ہے اور سڑکوں پر آباد ہے ، جھوٹوں پر بھروسہ کرنے کی یہ عبرتنا ک سزا اس لئے نہیں مل رہی ہے کہ ہم دوبارہ ان پر اعتما د کریں ،بلکہ ہمیں اس سے یہ سبق لینا ہے کہ اب ان کی سچی باتوں کو بھی ہم نہیں ما نیں گے۔
این آر سی کی واپسی کی بات کرنے والے انسان کے جملہ پر غور کرنے سے اس کی بد نیتی کا اظہار ہوتا ہے جس میں وہ یہ کہتا ہے کہ ہم ابھی این آر سی نہیں لائیں گے ،اس کا صاف مطلب یہ ہے کہ ہم اپنی اس بات سے تمہارے جذبات کو ٹھنڈا کررہے ہیں ، اور پھر ہم اس پر عمل درآمدی شروع کریں گے ، اور دوسری بات یہ کہ ہم نے این آر سی کے نفاذ کا چور دروازہ این پی آر کی شکل میں کھول رکھا ہے اس لئے این آر سی نہیں لائیں گے ، معاملہ بالکل صاف اور بد نیتی بالکل ظاہر ہے ، ایسے میں ہمیں ان کی سچی باتوں پر بھی بھروسہ کرنے سے گریز کرنا ہوگا ، اور اپنے مشن اور دوسری آزادی کی اس لڑائی کو اپنی سطح پر جاری رکھنا ہوگا ، ہمیں اپنے موقف پر اس وقت تک ڈٹے رہنا ہوگا جب تک اس کالے قانون کی کاپیاں جلا نہ دی جائیں ،ہمیں کسی بھی بہکاوے میں آنے سے کلی طور پر پرہیز کرنا ہوگا اور اپنے اس موقف پر مضبوطی سے جمے رہنا ہوگا ۔
اور ایک بات میں عمومی طور پر آپ تمام قارئین کے حوالہ کرنا چاہوں گا کہ جھوٹ کاکوئی خاص لبادہ اور شکل نہیں ہوتی ، بلکہ اس کے مختلف چہرے اور متعدد شکلیں ہیں ، اس لئےاس کی ہر شکل وصورت سے دوری بنائے رہنا عقل مندی اور دانشمندی ہے ، خواہ جھوٹ دھوتی پگڑی کی شکل میں ہو ، شوٹ بوٹ کی شکل میں ہو یا پھر جبہ ودستار عمامہ وپائجامہ کی شکل میں ہو ، اس سے دور رہنے میں کامیابی اور اس کی قربت اختیار کرنے میں ناکامی یقینی ہے ، اس لئے ہمیں کسی بھی جھوٹے پر اعتماد کرنے سے اور اس کے بہکاوے میں آنے سے حتی الوسع دوری بنائے رہنا چاہئے ۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: