اہم خبریں

تحریک آزادی اور جمعیۃ علماء ہند کی تاریخ غازی پور کےتذرہ کے بغیر ادوھری ہے۔مولانا عبد الرب اعظمی

تحریک آزادی اور جمعیۃ علماء ہند کی تاریخ غازی پور کےتذرہ کے بغیر ادوھری ہے۔مولانا عبد الرب اعظمی

نامہ نگار۔خاطر احمد غازی پوریؔ

جمعیۃ علماء ہند یونٹ شہر و ضلع غازی پور کے زیر اہتمام بانی ِغازی پور حضرت سید مسعود غازی ؒ اوروکیل احناف حضرت مولانا ابوبکر غازی پوریؒ کے ابائی محلہ سید واڑہ بمقام شاہ لگن پیلس ضلع غازی پور میں جلسہ اصلاح معاشرہ و جمعیۃ علماء ہند کی خدمات اور ہماری ذمہ داریاں کے عنوان سے پروگرام منعقد ہوا۔ جس کی صدرارت مولانا حفیظ الرحمن قاسمی ؔ نعمانیؔ صدر جمعیۃ علماء ضلع غازی پورنے کی،اورسرپرستی۔مولانا محمد عثمان اعظمی ؔ صدر مدرس مدرسہ عظیمیہ اسلامیہ غازی پور اور مفتی محمد عبد اللہ فاروق قاسمیؔ صدر جمعیۃ علماء شہر غازی پور نے فرمائی، جس میں مہمانان خصوصی کی حیثیت سے مولانا عبد الرب اعظمی ؔ صدر جمعیۃ علماء اتر پردیش وناظم مدرسہ انوار العلوم جہانا گنج اعظم گڑھ اور مولانا وحا فظ عبد الحی مفتاحی صدر جمعیۃ علماء اتر پردیش مشرقی زون وناظم مدرسہ منبع العلوم خیر آباد ضلع مئو نے شرکت فرمائی اور نظامت کے فرائض مولانا محمد انس حبیب قاسمی ؔ جنرل سکر یٹری جمعیۃ علماء ضلع غازی پور نےادا کیا۔

جلسہ کا آغاز قاری شکیل احمد ندوی ؔ امام مسجد حبیب محمد پٹی مہوہ باغ کی تلاوت قرآن سے ہوا، بعده مولانا محمد عاصم قاسمی ؔ نے نعت پاک کا نزرانہ پیش کیا۔

جمعیۃیوتھ کلب (اسکا ؤٹ ایند گا ئد ) کے نوجوانوں نے مہمانان جلسہ کا پریڈ کرتے ہوئے اپنے مخصوص انداز میں پرتپاک استقبال کیا،مہمانان جلسہ کے ذریعہ پرچم کشائی ہوئی اور ترانہ جمعیۃ مولانا محمد عاصم قاسمی نے پیش کیا،اس کے بعد ناظم جلسہ مولانا محمد انس حبیب قاسمی نے اپنے تعارفی کلام میں قائد ملت مولانا محمود اسعد مدنی مدظلہ کی جانب سے دس نکاتی پروگرام میں سے اصلاح معاشرہ،مکاتب کے قیام، جمعیۃ یوتھ کلب کی تشکیل اور اس کی اہمیت نیز تعلیمی بیداری اور نشا مخالف تحریک اور اؤٹر بیداری مہم پر روشنی ڈالی۔

مولانا محمد نعیم الدین غازی پوری ؔ سکریٹری جمعیۃ علماءشہر غازی پور وناظم اعلیٰ مدرسہ اشاعت العلوم ،فتح پور سکندر، سٹی ریلوے اسٹیشن ضلع غازی پور نےسکریٹری رپوٹ 20/نکاتی پروگرام کومختصر طور پر پیش کیا اور خصوصاً بتایاکہ جمعیۃ علماء ضلع غازی پور کے زیر نگرانی تین مکاتب جس میں پہلا مکتب
شیخ الہند
بیاد گار ۔ شیخ المشائخ مجاہد آزادی ِ ہند حضرت مولانامحمود الحسن دیوبندیؒ بمقام ۔ مدرسہ اشاعت العلوم ، شاہی مسجد فتح پور سکندر، سٹی ریلوے اسٹیشن ضلع غازی پور،
دوسرا
مکتب بانی تبلیغ
بیاد گار۔ حضرت مولانا الیاس ؒ بمقام ۔ مسجد بڑاپورہ مرکز ضلع غازی پور
اور تیسرا مکتب
۔مکتب حکیم الامت بیادگار حضرت مولانا اشرف علی تھانوی رحمۃ اللہ علیہ بمقام مدرسہ اشرف العلوم خیراللہ پور انرواں ضلع غازی پور کا قائم عمل میں آیاہے ۔

اراکین جمعیۃ علماء شہرو ضلع غازی پور نے اپنے ائے ہوئے مہمانان خصوصی کا مونٹو پیش کر کے پرزور استقبال کیا نیز جمعیۃ یوتھ کلب کے نوجوانوں کو تحفہ پیش کر کے حوصلہ افزائی کی گئی۔

مولاناابو لکلام قاسمیؔ نائب صدر جمعیۃ علماء ضلع غازی پور نے اصلاح معاشرہ پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے اس دنیا سے پردہ فرماجانے کے بعد اس دینِ متین کے تحفظ و بقااوراس کی ترویج و اشاعت کی ساری ذمے داری علمائے امت کے کندھوں پرہے،یہ ان کا دینی فریضہ ہے کہ وہ دین کے علوم کو حاصل کرکے اگلی نسلوں تک پہنچائیں اور امت کے عمل،فکر و عقائدی کی خامیوں کو دورکرنے کا جتن کریں،ان کی یہ بھی ذمے داری ہے کہ وہ اپنے آپ کو نبوی صفات و خصوصیات سے آراستہ کریں اور امت کے سامنے ایک بہترین عملی نمونہ بنیں۔

حافط عبید اللہ بنارسی ؔ سکریٹری جمعیۃ علماء اتر پردیش مشرقی زون نے اصلاح معاشرہ کے عنوان پر گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ مسلمان قرآن و حدیث اور سنتوں پر پابندی سے عمل کریں کیونکہ آج عالمی اور ملکی سطح پر ہمیں اسلام پر عمل آوری سے روکنے کی کوشش کی جارہی ہے اور دین اسلام میں مداخلت کی کوششیں کی جارہی ہیں۔

مفتی عمار یاسر بنارسی ؔنے جمعیۃ یوتھ کلب کے اغراض و مقاصد پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ جیسا کہ آپ جانتے ہی ہیں کہ جمعیۃ علماء ہند کا ہر کام قرآن و حدیث کی ہدایات کے مطابق کیا جاتا ہے۔ چنانچہ اس کلب کے بھی دو بنیادی مقاصد ہیں، جن کے حوالے احادیث میں موجود ہیں۔
(۱) طاقت ور مومن تیار کرنا۔اس مقصد کا سرچشمہ نبی کریم ﷺ کا یہ فرمان ہے کہ المومن القوی خیر و احب الیٰ اللہ من المومن الضعیف۔ یعنی طاقت ور مومن اللہ کے نزدیک کمزور مومن سے زیادہ بہتر اور محبوب ہے۔
(۲) انسانیت کا خدمت گار بنانا۔یہ اس نبوی فرمان کا عملی مظہر ہے کہ خیرکم من ینفع الناس۔یعنی لوگوں کو نفع پہنچانے والا سب سے زیادہ بہتر شخص ہوتا ہے۔

مولانا رضوان بنارسیؔ نے بھی جمعیۃ یوتھ کلب کے اصول و قواعد پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ سماجی اور جماعتی خدمات انجام دینا،بلا تفریق مذہب و ملت مظلوموں کی امداد اور خلق خدا کی خدمت کرنا، قیام امن، حفاظت وطن اور ملک کے تعمیری پروگراموں میں تنہا یا دوسری جماعتوں کے ساتھ حصہ لینا،مسلمانوں میں دینی رجحان پیدا کرنا، اسکاؤٹنگ کے طریقے پر تربیت حاصل کرنا ملک اور قوم و ملت کا خادم بن کر زندگی گزارنا تاکہ اپنے اوقات کو ہم صحیح ترقے پر استعمال کر سکیں۔

معمار قوم و ملت مولانا وحا فظ عبد الحی مفتاحی صدر جمعیۃ علماء اتر پردیش مشرقی زون وناظم مدرسہ منبع العلوم خیر آباد ضلع مئو نے اصلاح معاشرہ پر مختصر مگر جامع گفتگو کی خاص طو رسے موصوف نے زوردیتے ہوئے کہا کہ اسراف اور فضول خرچی سے بچیں اور کہا کہ اپنے ذبات اور خواہشات کو کنٹرول کر کےسادگی کے ساتھ نکاح اور شادی کو آسان بنائں۔

فخر قوم وملت مولانا عبد الرب اعظمی ؔ صدر جمعیۃ علماء اتر پردیش و ناظم مدرسہ انوار العلوم جہانا گنج اعظم گڑھ کا جامع بیان ہوا مولانا نے فرمایا کہ تحریک ِ آزادی اور جمعیۃ علماء ہند کی تاریخ غازی پور کے تذکرہ کےبغیرادوھری ہے،مولانا نے بیان کرتے ہوئے کہا کہ شاہ عبدالعزیز محدث دہلوی کے معتمد سید احمد شہیدرحمۃ اللہ علیہ کا قافلہ انگریزوں کے خلاف جہاد کی تیاری کیلۓ دریائے گنگا کے راستے جب غازی پور پہنچا تو اس وقت أپ کے مرید خاص محلہ قاضی ٹولہ کے شیخ فرزند علی رحمۃ اللہ علیہ نے ایک لاکھ چاندی کا سکہ دیا اور اپنے بیٹے شیخ امجد علی کو اللہ کے راستہ میں بھیجا جو بالا کوٹ کی جنگ میں شہید ہوئے اور انکے ساتھ غازی پور کے اور چند لوگ شہید ہوئے اس سفر میں سید احمد شہید رحمۃ اللہ علیہ نے زمانیہ ۔غازیپور شہر ۔اور بارا گاؤں میں پڑاؤ ڈالا تھا ۔۔نیز مولا نا نے اپیل کی کہ تمام مکتب فکر کے علماء کو ایک اسٹیج پر أکر ملک وملت کے مسائل کو سر جوڑ کر حل کرنے کیلئے آگے أنے کی ضرورت ہے مولانا نے مجاہد أزادی ڈاکٹر مختار انصاری مولانا سید احمد ہاشمی رحمۃ اللہ علیہ کی قربانیوں کا تذکرہ کیا اخیر میں مولانا نے جمعیت کے کاز کو ترقی دینے کیلئے سبھی لوگوں کو آگے أنے کی ضرورت ہے اور یہ وقت کا اہم تقاضا ہے۔

اخیر میں صدر اجلاس حضرت مولنا حفیظ الرحمن قاسمی ؔ نعمانی ؔصدر جمعیۃ علماء ضلع غازی پور نے دعائیہ کلمات کے ساتھ جامع دعا کرائی ۔
مولانا انس حبیب قاسمی ؔ جنرل سکر یٹری جمعیۃ علماء ضلع غازی پور نے آئے ہو تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اورجلسہ کے اختتام کا اعلان کیا۔
اس موقع پر مولانا نسیم ندوی ؔ امام مسجد عمر فاروق گورابازار، ماسٹر عابد حسین انصاری، شہنواز احمد صدیقی، محمد اعظم انصاری ، مولانا اسرارالحق ثاقبی، مولانااکرام الدین قاسمی ؔ ، قاری صاحب علی صدر مدرس مدرسہ اشاعت العلوم موجود تھے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: