غزل

نظم ” جشن آزادی”

ازقلم افتخار حسین احسن.
رابطہ 6202288565

پیار کی شمع جلاو جشن آزادی ہے آج.
دیپ نفرت کا بجھاو جشن آزادی ہے آج.

جو ہمیں کہتے ہیں غدار وطن اس دیش میں.
جنگ کا قصہ سناو جشن آزادی ہے آج.

خون دیکر ہم نے بھی سینچا ہے ہندوستان کو.
بات یہ سب کو بتاو جشن آزادی ہے آج.

گر کوئی اپنا یا بیگانہ خفا ہو آپ سے.
اس کو محفل میں بلاو جشن آزادی ہے آج.

جو کوئی مہمان آئے آپ کی تقریب میں.
دیش کا لڈو کھلاو جشن آزادی ہے آج.

بس یہی کہنا ہے احسن کا سبھی احباب سے.
جام الفت کا پلاو جشن آزادی ہے آج

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں
Close
Back to top button
Close
%d bloggers like this: