اہم خبریں

جمعیت علمائے بسنت رائے اور گڈا کی سماجی شخصیات کا جمعیت آفس کی زمین پر دعائیہ مجلس

مورخہ 10 دسمبر 2019 کو جمعیت علمائے بسنت رائے اور گڈا کی سماجی شخصیات پر مشتمل ایک وفد نے سر شام گڈا شہر میں جمعیت علمائے ضلع گڈا کے لیے خریدی گئی زمین کا معائنہ کیا اور اس کی تعمیر ی فکر مندی ظاہر کرتے ہوئے زمین پر دعائیہ مجلس منعقد کی۔ مدرسہ محمود العلوم اسنبنی گڈا کے مہتمم مفتی عبد الرحمان مظاہری نے اہل مجلس کو معلومات فراہم کرتے ہوئے بتایا کہ یہ وہ زمین ہے، جس پر مولانا ارشد مدنی صاحب صدر جمعیت علمائے ہند، امیر الہند قاری محمد عثمان صاحب منصور پوری صدر جمعیت علمائے ہند، قائد جمعیت مولانا محمود اسعد مدنی صاحب اور دیگر ذمہ داران جمعیت تعمیر و ترقی کے لیے دعا کراچکے ہیں۔ اور آج ہم لوگ بھی اسی مقصد کے لیے حاضر ہوئے ہیں ۔ انھوں نے اپنا سلسلہ کلام جاری رکھتے ہوئے کہا کہ آج بھی ہم لوگ اسی مقصد کو لے کر اللہ کے حضور حاضر ہوئے ہیں کہ اللہ تعالیٰ اس کی جلد از جلد تعمیر کرادے۔ انھوں نے اپنا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ جھارکھنڈ میں Santhal Pargana Tenancy Act 1949 لاگو ہونے کی وجہ سے خدشہ ہے کہ اگر جلد تعمیر کی فکر نہیں کی گئی ، تو اس پر ناجائز قبضہ ہوسکتا ہے۔ مفتی صاحب نے بڑی الحاح و زاری کے ساتھ تعمیر کے لیے دعا کرائی ، جس پر سبھی اہل مجلس نے صدائے آمین بلند کی۔
اس سے قبل مدرسہ محمود العلوم اسنبنی میں منعقد ایک مختصر نشست میں شہر گڈا و اطراف میں ہورہی جمعیت کی ممبر سازی کا جائزہ پیش کیا گیا اور پھر یہ فیصلہ ہوا کہ عنقریب ممبر سازی کے حوالے سے گڈا و اطراف میں واقع بلاک سطح کی ذمہ دار شخصیات کی میٹنگ بلائی جائے گی اور ممبر سازی کی تحریک کو مہمیز کی جائے گی۔
اس میٹنگ اور وفد میں مفتی عبد الرحمان صاحب مہتمم مدرسہ محمود العلوم گڈا کے علاوہ جناب جاوید صاحب(مشہور سماجی کارکن)، جناب شارق صاحب ( مشہور صحافی) ، مولانا محمود صاحب استاذ مدرسہ محمود العلوم، مولانا فیروز صاحب مہتمم مدرسہ اشاعت العلوم، مفتی محمد نظام الدین قاسمی ناظم اعلیٰ جمعیت علمائے بسنت رائے و مہتمم مدرسہ اسلامیہ رحمانیہ جہاز قطعہ، مولانا محمد یاسین جہازی قاسمی جمعیت علمائے ہند، مولانا محمد سرفراز صاحب قاسمی سکریٹری جمعیت علمائے ہند، مولانا احمد حسین صاحب پرسہ اور ڈاکٹر محمد نذیر الدین صاحب پرنسپل مولانا ابوالکلام آزاد انٹر کالج بسنت رائے شریک رہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: