اہم خبریں

جمعیۃ علماء ہند کی قومی مجلس عاملہ کا ہنگامی اجلاس طلب

بابری مسجد قضیہ پر آئے فیصلے کا جائزہ لینے اور آگے کے اقدام پر تبادلہ خیال کے لیے مرکزی دفتر جمعیۃ علماء ہند نئی دہلی میں 20/نومبر کو شام چار بجے اجلاس شرو ع ہو گا
نئی دہلی۔19/نومبر
بابری مسجد قضیہ پر آئے فیصلے اور اس کے عواقب پر غور و خوض کے لیے جمعےۃ علماء ہند کی قومی مجلس عاملہ کا اجلاس 20/نومبر کو صدر جمعیۃ علماء ہند مولانا قاری سید محمد عثمان منصورپوری کی صدارت میں منعقد ہو گا۔یہ اجلاس جمعیۃ علما ء ہند کے صدر دفتر ۱۔ بہادر شاہ ظفر مارگ نئی دہلی میں شام چار بجے شروع ہوگا۔سپریم کورٹ کے حالیہ بابری مسجد فیصلے کے خلاف ریویو پٹیشن داخل کی جائے یا نہ کی جائے اور پانچ ایکڑ زمین قبول کی جائے یا نہ کی جائے، اس سلسلے میں پورے ملک میں بحث چل رہی ہے، جمعیۃ علماء ہند کی مجلس عاملہ میں شامل ملک بھر سے آنے والے علماء، وکلاء اور قائدین سے امید کی جاتی ہے کہ وہ سیر حاصل بحث کرکے ماضی کی روایت کے مطابق صحیح سمت کی طرف رہ نمائی کریں گے۔ اجلاس میں موجود ہ حالات اور اوقاف کے تحفظ پرکی تدابیر پر بھی غور وخوض ہو گا۔
اجلاس میں صدر جمعیۃ علماء ہند مولانا قاری سید محمد عثمان منصوپوری اور ناظم عمومی مولانا محمود مدنی کے علاوہ مولانا امان اللہ قاسمی نائب صدر جمعیۃ علماء ہند،مولانا صدیق اللہ چودھری صدر جمعیۃ علماء مغربی بنگال، مولانا متین الحق اسا مہ صدر جمعیۃ علماء یوپی، مولانا بدرالدین اجمل صدر جمعیۃ علماء آسام، حافظ ندیم صدیقی صدر جمعیۃ علماء مہاراشٹرا، مولانا قاری شوکت علی ویٹ، حافظ پیر شبیر احمد صدر جمعیۃ علماء تلنگانہ و آندھرا پردیش، مفتی افتخار احمد قاسمی صدر جمعیۃ علماء کرناٹک،ایڈوکیٹ نیاز احمد فاروقی، ایڈوکیٹ شکیل احمد سید، مفتی محمد سلمان منصورپوری استاذ حدیث جامعہ قاسمیہ شاہی مرادآباد، مفتی جاوید اقبال کشن گنجی صدر جمعیۃ علماء بہار، مولانا معزالدین احمد ناظم امارت شرعیہ ہند، مفتی محمد راشد اعظمی ا ستاذ دارالعلوم دیوبند، سید سراج الدین معینی ندوی درگاہ اجمیر شریف، مولانا رحمت اللہ کشمیری، مولانا عبدالقادر آسام، ڈاکٹر مسعود عالم مؤ، حاجی محمد ہارون بھوپال، مفتی حبیب الرحمن الہ آباد، مفتی محمد عفان منصورپوری، مولانا محمد عاقل گڑھی دولت، مولانا علی حسن مظاہری ناظم اعلی جمعیۃ ہریانہ، پنجاب اور ہماچل پردیش، مولانا محمد سلمان بجنوری استاذ دارالعلوم دیوبند کی شرکت متوقع ہے۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: