اہم خبریں

جمعیۃ علماء ہند کے صدر دفتر میں کئی اہم شخصیات کے وفات پر ایصا ل ثواب کا اہتمام

جمعیۃ علماء ہند کے صدر دفتر میں کئی اہم شخصیات کے وفات پر ایصا ل ثواب کا اہتمام
جولوگ چلے گئے وہ ہماری دعاؤں کے محتاج ہیں: مولانا حکیم الدین قاسمی جنرل سکریٹری جمعیۃ علمائے ہند

نئی دہلی ۲۹ مئی آج بعد نماز عصر دفتر جمعیۃ علماء ہند نئی دہلی کی مسجد عبدالنبی میں تلاوت قرآن کریم کے وسیلے سے کئی اہم شخصیات کے لیے ایصال ثواب کا اہتمام کیا گیا۔ اس موقع پر سیوان کے سابق ایم ایل اے جناب شہاب الدین مرحوم کے صاحبزادے ایڈوکیٹ اسامہ شہاب بھی مجلس دعاء میں شریک ہوئے اور اپنے والد کے لیے دعاء کی درخواست کی۔
تلاوت قرآ ن کریم کے بعد جمعیۃ علماء ہند کے جنرل سکریٹری مولانا حکیم الدین قاسمی نے کہا کہ زندگی میں ایک بار سبحان اللہ کہنا، مرنے کے بعد پچیس بار قرآن کریم مکمل کرنے سے بہتر ہے۔اس سلسلے میں انھوں نے ایک بزرگ کا واقعہ سنایا جن کو قبر میں قرآن مجید تلاوت کرنے کی اجازت ملی تھی، مگر پھر انھوں نے کسی کو خواب میں بتایا کہ زندگی میں جو ایک بار سبحان اللہ کہا تھا، ان کے پچیس بار قرآن کریم ختم کرنے سے افضل تھا۔ اس موقع پر مولانا نے جمعیۃ علماء اور اس کے احباب کے جدا ہونے اور ان کے اعزا کے جدا ہونے کا تذکرہ کیا اور ان کے لیے ایصال ثواب اور دعاء کرائی۔ بالخصوص جناب حافظ بشیر احمد آرگنائزر جمعیۃ علماء ہند کی والدہ، مفتی انیس چلڈرن ولیج انجار کے دادا محترم، جناب سعید اخترمرحوم سابق کارکن اخبار الجمعیۃ،مولانا شبیر احمد راجستھان، مولانا ابراہیم صاحب جوناگڑھ، جناب عادل نصیر کی بھابھی، انوار احمد نور کی اہلیہ، مولانا عبدالکافی صاحب کی اہلیہ و صاحبزادے، مولانا نذرالحفیظ صاحب ندوۃ العلماء، مولانا عظیم اللہ قاسمی کے ماموں ماسٹر محی الدین صاحب اور ماسٹر بشیر احمد صاحب،جناب انور حسین صاحب کے چچا، جناب شہاب الدین صاحب مرحوم سیوان اور دیگر بہت سارے احباب اوردارالعلوم دیوبند، ندوۃ العلما، علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے اساتذہ کے لیے دعائے مغفرت کا اہتمام کیا گیا۔
اس موقع پر بالخصوص جمعیہ علماء ہند کے مرحوم صدر امیر الہند مولانا قاری سید محمد عثمان منصورپوری کو یا دکیا گیا، جن کی زندگی میں دیانت اور تقوی بے مثال صفت تھی۔
ان تمام مرحومین کے لیے مولانا کلیم الدین قاسمی امام وخطیب مسجد عبدالنبی نے دعاء کرائی۔
اس مجلس میں مذکورہ شخصیات کے علاوہ، جناب مولانا عبدالملک رسول پوری، مولانا عظیم اللہ صدیقی، مولانا ضیاء اللہ قاسمی، مولانا نجیب اللہ قاسمی، ڈاکٹر ابومسعود، قاری محمود، مولانا احتشا م الحق، جناب مبشر احمد، جناب حاجی عارف، انوار احمد نور،
سعید احمد سمیت بڑی تعداد دفتر کے ذمہ داران و کارکنان موجود تھے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close