مضامین

جنا ب وزیر سعید صاحب لوچنی ؒ

مولانا ثمیر الدین قاسمی انگلینڈ

ولادت 1933ء غالبا

علا قائی ماحول میں جب کبھی وزیرصاحب بولتے ہیں تو صرف ایک ہی مردمیدان کا خاکہ ذہن میں آتا ہے اور وہ ہیں جناب وزیر سعید صاحب لوچنی کیونکہ ہمارے علاقے میں سیا ست کے اس اوج فلک تک صرف ایک ہی شخصیت نے ابتک رسائی حاصل کی ہے۔وہ جنتا پا رٹی کیب جانب سے ۷۷۹۱میں بہاراسمبلی کے ایم ایل اے۔منتخب ہوئے اوراسی دوران ڈھائی سال تک منصب وزارۃاوقاف بہار پر سایہ فکن رہے۔
اس دوروزارت میں انہو ں نے بڑی دریادلی سے مساجد ومقابر کی حفاظت کی اور بہار اسمبلی سے خطیر رقم مساجد ومقابر کودلوایا علاقائی کئی قبر ستانو ں میں ہندومسلم فسادات ہوئے اور معاملہ کورٹ میں گیا تو وزیرصاحب نے اسکی پیروی کی اورقبرستان کومسلمانوں کے حوالہ کرنے میں قدمے سخنے امدادفرمائی۔
آپکاکاروان زندگی بہت سے نشیب وفرازاورزیروبم سے گذراہے اوراس راہ میں بہت سے تجربات سے ہمکنار ہواہے اس پورے سفرپرروشنی ڈالنے کے لئے آپ نے کتاب”کاروان زندگی“تصنیف کی ہے،جسمیں حقائق وواقعات اور تجربات زندگی کاخلاصہ پیش کیاہے،ابھی تک علاقے میں دوچارہی حضرات نے کتاب تصنیف کرنے کی ہمت کی ہے جن میں سے ایک آپ ہیں۔
آپ انتظام وسیاست کے ساتھ بہت دریادل بااخلاق اور معتمل مزاج واقع ہوئے ہیں اورخدمت قوم کاجزبہ رکھتے ہیں۔آپ اس وقت ومکامیں مکان بنوائے ہیں اوروہیں رہتے ہیں۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: