مضامین

جہیز لینے والوں کا بائیکاٹ کیا جائے یا جہیز لینے والوں کے لئے جہیز کا انتظام کروایا جاءے؟

مفتی محمد سفیان القاسمی
مدرسہ حسینیہ تجوید القرآن دگھی گڈا جھارکھنڈ

ادھر حال ہی میں عائشہ نامی ایک لڑکی نے خود کشی کر کے اپنی جان گنوا دی، آج کل اس پر طرح طرح کے تبصرے ہو رہے ہیں، چنانچہ اس کی خود کشی کی کئی وجوہات بتائی جاتی ہیں، ان میں سے ایک وجہ جہیز کا سامان نہ لانا بھی بتاتے ہیں، اس کی وجہ سے اب کچھ لوگ تو جہیز کے اتنے شدید مخالف ہو گئے ہیں کہ وہ جہیز لینے والوں کی مکمل بائیکاٹ کی بات کر رہے ہیں تاکہ آئندہ کوئی دوسری عائشہ اس درد و کرب سے نہ گزرے جبکہ کچھ لوگ ایسے بھی ہیں جنھوں نے اس کا دوسرا حل نکالا ہے، وہ یہ کہ وہ باضابطہ تنظیم بنا کر غریب لڑکیوں کو جہیز کا سامان دینے کا انتظام کر رہے ہیں تاکہ جہیز کا سامان نہ لانے کی وجہ سے اس کی سسرال کے لوگ حقارت کی نظر سے نہ دیکھیں، ان کی سوچ کے مطابق چونکہ جہیز نہ لانے کی وجہ سے طعن و تشنیع اور تشدد کا سامنا کرنا پڑتا ہے لہذا جہیز کا انتظام کر دیا .

مگر ہم کو یہ سمجھ میں نہیں آیا کہ ان دونوں میں سے کون سا درست حل ہے، جہیز لینے والوں کا بائیکاٹ کرنے سے مسئلہ کا حل ہوگا یا جہیز لینے والوں کے لئے جہیز کا انتظام کرنے سے. اور جہیز کا اس طرح انتظام کر دینے سے جہیز لینے والوں کا حوصلہ مزید بڑھے گا یا ان کی حوصلہ شکنی ہوگی اور اس طرح یہ وبا اور زیادہ پھیلے گی یا ختم ہوگی؟

چونکہ میں اس کا فیصلہ کرنے سے قاصر ہوں اس لئے یہ فیصلہ آپ پر ہی چھوڑ دیتا ہوں آپ ان دونوں میں سے جس کو چاہیں درست مانیں، ہاں لیکن یاد رہے کہ اگر بائیکاٹ کرنے کو حل سمجھتے ہیں تو اس کی پر زور حمایت کریں اور اگر جہیز کا انتظام کرنے کو حل سمجھتے ہیں تو ایسی تنظیموں کا بھر پور تعاون کریں جو غریب لڑکیوں کے جہیز کے لئے چندے کر کے انتظام کرتی ہیں اور ہو سکے تو اس طرح کی خود بھی تنظیم بنا کر لڑکیوں کے جہیز کا انتظام کرنے کے لئے چندے میں نکل پڑیں.

مذکورہ سطریں لکھنے کے بعد میں نے اپنے ایک ساتھی کو یہ تحریر بھیجی تو انھوں نے کہا، آپ کی تحریر سے لوگ بھی کنفیوژن کے شکار ہوں گے اس لیے آپ واضح طور پر لکھئے کہ جہیز دلوانے کے لئے چندہ کرنا اور کروانا یہ بھی جہیز کو فروغ دینے کی ہی شکل ہے. لہذا جہیز کو فروغ دینے کی جتنی بھی شکلیں ہیں ہر ایک سے پرہیز کیا جائے

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: