زبان و ادب

حدیں‌ہیں‌مقرر

پریم ناتھ بسملؔ مرادپور، مہوا، ویشالی۔ بہار رابطہ۔8340505230

یہ مانا کہ خطرہ ہے جاں کے لیے
تو اب لوٹ جا بھی مکاں کے لیے
مگر یہ کرونا نہیں ہے بلا
کہ ہے اس میں اپنی بھی تھوڑی خطا
بہت تیز چلنے لگا تھا جہاں
نہ جانا جہاں! جا رہا تھا وہاں
حدیں ہیں مقرر سبھی کے لیے
سنبھل جا ذرا زندگی کے لیے
نہیں ذات کوئی، نہ مذہب کوئی
نہ الزام لائے کسی پر کوئی
پریشاں کیا اس نے سب کو یہاں
بچی جان اس سے ہے کس کی کہاں
چلائی ہے قدرت نے چابک عجب
جسے دیکھ کر آج حیراں ہیں سب
ہوا اُس کی چابک کا ایسا اثر
گیا ہے جہاں یہ اچانک ٹھہر
حدیں ہیں مقرر سبھی کے لیے
ٹھہر جا تو بسملؔ ابھی کے لیے

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

یہ بھی پڑھیں
Close
Back to top button
Close
%d bloggers like this: