اہم خبریں

حضرت امیر شریعت کی وفات ملت اسلامیہ کا عظیم خسارہ

مفتی فہیم الدین رحمانی ، میڈیاترجمان جمعیۃعلماءہند شہر لونی

آج ۲۰ شعبان المعظم ۱۴۴۲ہ مطابق ۳ اپریل ۲۰۲۱ء بروز ہفتہ دوپہر ڈھائی بجے کے قریب اطلاع موصول ہوئی کہ جگر گوشۂ قطب الاقطاب حضرت امیر شریعت ، امارت شرعیہ بہار اڑیسہ و جھاڑ کھنڈ ، سجادہ نشیں خانقاہ رحمانی و سرپرست اعلیٰ جامعہ رحمانی مونگیر ، جنرل سکریٹری آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ ، و رحمانی فاؤنڈیشن کے بانی کا انتقال ہوگیا ، *اناللہ و انا الیہ راجعون*
مولانا کی وفات کا حادثہ فاجعہ اندوہ ناک ، محزن و مغموم کن حادثہ ہے ، دینی ملی اور سیاسی میدانوں میں آپ ناقابلِ فراموش خدمات ہیں ۔
امیر شریعت کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے ، طالب علمی کے دور سے ہی ملک و قوم کی حمیت اور قوم و ملت کی خدمات کا جذبہ کوٹ کوٹ کر بھرا ہوا تھا اور ایسا ہوتا بھی کیوں نہیں اس لئے کہ ان پرورش اور تعلیم و تربیت ہی ایسے ماحول اور ایسے خاندان میں ہوئی تھی ،
جس نے اسلامی حمیت اور دین اسلام کی صیانت و حفاظت کے لئے سب کچھ قربان کردیا ،ایسے بزرگ و برگزیدہ خاندان کے چشم و چراغ تھے ،
آج ملک کے حالات جس طرح پیچیدہ اور مہیب ہے ، شریعت و شعائر اسلام پر جس طرح پے در پے حملوں کی بوچھاڑ ہے، زبان حق گنگ ہے، یا پھر مظالم کے خوف سے خاموش ہوچکی ہیں ، ایسے حالات میں مرحوم بے باکانہ انداز میں اہل اقتدار سے لوہا منوا رہے تھے، اور ان کے ہر ہتھکنڈوں کا منھ توڑ جواب دے رہے تھے، امت پر آنے والی ہر بڑی و چھوٹی مصیبتوں کے لئے سیسہ پلائی ہوئی دیوار بن کر کھڑے تھے ،اور حالات کا مردانہ وار مقابلہ کر رہے تھے کہ اچانک اس مرد قلندر کی وفات کی خبر آپہنچی ،
آپ کی وفات حسرت آیات نے ملک و ملت کو عظیم نقصان سے دوچار کیاہے ،
موصوف نے 1974 سے 1996 تک بہار قانون ساز کونسل کے ارکان کی حیثیت سے خدمات انجام دیں ہیں، وہ اپنے والد ماجد حضرت مولانا سید منت اللہ رحمانی علیہ الرحمہ کی وفات1991 کے بعد سے خانقاہ رحمانی مونگیر کے موجودہ سجادہ نشیں تھے ، آپ کے دادا مولانا محمد علی مونگیری بانی دارالعلوم ندوۃ العلماء ہیں ، اس خانقاہ کے روحانی سلسلہ میں شاہ فضل الرحمن گنج مراد آبادی بہت ہی اہم کڑی ہیں ، اللہ رب العزت سے دعا ہے کہ ان کی قبر کو نور سے منور فرما کر اعلیٰ علیین میں جگہ نصیب فرمائے ۔آمین یارب العالمین
*شعبہ نشر واشاعت ، جمعیۃ علماء ہند شہر لونی*

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: