غزل

خراج عقیدت بر وفات شاعر انقلاب راحت اندوری مرحوم

*اَزقَــــــــــلم:-* _افتخـــــــار حسین "احســـــــــــن”._
*رابطـــــــــــــہ نمبــــــــــــــــر:-* _.6202288565._
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
روشن چـــــــــراغ قلب منــــــــوّر چلا گیــــــا.
اردو ادبـــــــــ کا گویا سمنــــــــدر چلا گیــــــا.

جاری ہوئــے ہیں اشک خبـــر جب مجھےملی.
پیار و وفـــــــا کا ایک پیمبـــــــــر چلا گیــــــا.

محفـل کو لوٹ لیتا تھـا پل بھر میں جوکہیں.
وہ خوش بیـــــــان یار سخنـــــور چلا گیــــــا.

اس کی زباں میں چاشنی شیریں تھی گفتگو.
سب کو اُداس چھـــوڑ وہ دلبـــــر چلا گیــــــا.

جو قہقہوں سے تیــــــر چلاتا تھا غیـــــــر پر.
دنیا سے ایســــــا قیمتی گوہــــــر چلا گیــــــا.

وہ مُسکـــــــــــرانا چیخنــــــــا وہ ہاتھ ہلانـــا.
میری نظـــــــر سے آج وہ منظــــر چلا گیـــــا.

سویا ہوں رات خـــواب میں ایسا لگا مجھــے.
محفل سے اٹھ کے خُلــــد کے اندر چلا گیــــــا.

*”اَحســـن”* بنالوں شعـــرو سخن کا اســــے امام.
یہ سوچتــــا ہی رہ گیــا رہبــــــــر چلا گیــــــا.
…………………………………………………….

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: