اہم خبریں

دارالعلوم دیوبند کےموقف کا خیر مقدم ہے

شاکر حسین عابدی قاسمی

دار العلوم دیوبند کے مہتمم مفتی ابوالقاسم صاحب دامت برکاتہم کی ویڈیو دیکھ کر جتنا خون جلا تھا اب اس کی بھرپائی ہورہی ہے۔ اللہ رب العزت جو کرتا ہے بہتر ہی کرتا ہے۔ امت مسلمہ ہندیہ کے لئے عمومی طور پر قلب کی حیثیت رکھنے والا ادارہ یعنی دار العلوم دیوبند کی طرف سے موجودہ احتجاج کے متعلق ابھی تک کوئی آفیشیل بیان نہیں آیا تھا آج صبح مہتمم صاحب کی ویڈیو دیکھ کر دل خون ہوگیا تھا۔ بار بار ذہن میں آرہا تھا کہ (انشاءاللہ) اس بیان سے موجودہ تحریک کو کوئی نقصان تو نہیں پہنچے گا کیوں کہ قوم اپنا نفع نقصان پہچان رہی ہے۔ مگر ہماری آنے والی نسلیں جب کتابوں میں پڑھے گی کہ جب قوم کی بیٹیاں سڑکوں پہ دادِ شجاعت دے رہی تھیں تب قوم کے بزرگ سرکاری زبان بول رہے تھے تو شاید وہ ہم پر لعنت ملامت کرتے ہوئے ہم سے اپنا رشتہ جوڑنے میں بھی شرمندگی محسوس کریں۔ الحمد للہ یہی ویڈیو دارالعلوم دیوبند کے موقف کی وضاحت کا سبب بن گیا۔ اس ویڈیو کی وجہ سے دارالعلوم دیوبند نے صاف اور دوٹوک لفظوں میں اپنا موقف واضح کیا ہے۔ اور جب تک احتجاج سے مطلوبہ چیز حاصل نہیں ہوجاتی تب تک اسے جاری رکھنے کی بات کی ہے۔ ہم اس کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ بہت ممکن ہے کہ یہ کہا جائے کہ پہلے ویڈیو کو میڈیا لے اڑی اور حکومت کو اس سے فائدہ ہوچکا لہذا اب اس تحریر کا کیا فائدہ؟؟ لیکن یہ بات بھی مدنظر رہنی چاہئے کہ ویڈیو آفیشیلی جاری نہیں کیا گیا تھا اسے انفرادی رائے کہہ کر بہت آسانی سے رد کیا جاسکتا ہے۔ بہرحال دارالعلوم دیوبند کے اس موقف کی ہم مکمل تائید کرتے ہیں اور اللہ سے دعا کرتے ہیں کہ دار العلوم کی یہ تحریر تلافی مافات کے لئے کافی ہوجائے۔

نوٹ: واضح رہے کہ اس تحریر کا مقصد دارالعلوم کے متفقہ موقف کی تائید ہے نہ کہ ویڈیو کی۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

یہ بھی پڑھیں
Close
Back to top button
Close
%d bloggers like this: