اہم خبریں

زمانہ کی نزاکت کو سمجھیے؛ ورنہ زمانہ آپ کو روند کر آگے بڑھ جائے گا: علمائے کرام

جعمیت علمائے ہند کے تنظیمی سلسلہ کی مقامی یونٹ جمعیت علمائے بسنت رائے کے بینر تلے، علمائے کرام کا ایک موقر وفد آج کل پرکھنڈ کے 45 گاوں کے دورے پر ہے ، جہاں وہ لوگوں سے حالات حاضرہ کو سمجھنے ، نبض پکڑنے اور اس کے مطابق مستقبل کے لائحہ عمل طے کرنے کے تئیں بیدار کرنے کا فریضہ انجام دے رہا ہے۔ حسب معمول وفد کیتھیہ اور پرسیہ نامی گاوں پہنچا اور لوگوں سے لاک ڈاون میں تعلیمی نظام کو منظم کرنے، ہر پچیس تیس بچوں پر ایک مکتب قائم کرنے، مقامی لیڈر شپ قائم کرنے کے حوالے سے ہر گاوں میں ایک دینی لیڈر اور ایک سیاسی لیڈر بنانے، ملک کی موجودہ معاشی سسٹم تباہ ہونے کے پیش نظر ترقی کے دور میں آگے بڑھنے کے لیے تجارت سے جڑنے، گاوں کی ہر مسجد میں کلام پاک کی تفسیر کا سلسلہ قائم کرنے اور جمعیت علمائے ہند کا ابتدائی ممبر بننے کی اپیل کر رہے ہیں، اسی سلسلہ کو آگے بڑھاتے ہوئے مورخہ 12 ستمبر 2020 کو کیتھیہ اور پرسیہ کا دورہ کیا اور لوگوں کو متعلقہ مسائل کے تحت بیدار کرتے ہوئے بتایا کہ زمانہ کی نزاکت کو سمجھنے کی ضرورت ہے، ورنہ زمانہ آپ کو روند کر آگے بڑھ جائے گا۔
وفد میں‌مفتی محمد نظام الدین قاسمی ناظم اعلیٰ‌جمعیت علمائے ہند، و مہتمم مدرسہ اسلامیہ رحمانیہ جہاز قطعہ، مولانا محمد یاسین جہازی جمعت علمائے ہند، مولانا محمد سرفراز قاسمی نائب مہتمم مدرسہ اسلامیہ رحمانیہ جہاز قطعہ، و خازن جمعیت علمائے بسنت رائے، مفتی محمد زاہد امان قاسمی سکریٹری جمعیت علمائے بسنت رائے، قاری کلیم الدین صاحب جہازی کے علاوہ جناب ہارون صاحب، جناب نذیر صاحب، اور کئی مقامی شخصیات شریک تھیں.
اب تک وفد نے بنسی پور، اعظم پکڑیا، کیتھ پورہ، جھپنیاں، دھپرا، سوڑھا، لوچنی، پچوا قطعہ، راہا، کوریانہ، کیواں، گوپی چک، کیتھیہ اور پرسیہ کا دورہ کرچکا ہے۔ ان 14 بستیوں کے علاوہ 31 گاوں کا دورہ کا سفر جاری ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: