اہم خبریں

سنہولا بھاگلپور میں این آر سی کے خلاف لوگوں میں شدید غصہ

ہم بھارتی ہیں اور ہمیں یہ کالے قانون منظور نہیں ہیں

31 دسمبر 2019 کو کمالپور ہاٹ سنہولہ میں سمودھان بچاؤ دیش بچاؤ ریلی منعقد کی گئی جس میں ہر مذہب کے لوگوں نے شرکت کی اور انھوں نے بیان میں یہ بات کہی کہ حکومت گندی پالیسیوں کے ذریعے ملک میں نفرت پھیلانا چاہتی ہے دیش کو بانٹنا چاہتی ہے مذہب کے نام پر کسی قانون کو لاگو کرنا آئین کی بنیاد کے خلاف ہے ہندوستان جمہوری ملک ہے یہاں کی شہریت کے سلسلے میں مذہب کی بنیاد پر کوئی تفریق اس آئین کو ختم کرنے کی سازش ہے جس پارٹی کا ہندوستان کی آزادی میں کچھ بھی رول نہیں، جو انگریزوں کے تلوے چاٹتی رہی، وہ آج یہاں کے باسیوں سے ہندوستانی ہونے کا ثبوت مانگتی ہے caa,NRC اورnpr میں این آر سی کی چیزوں داخل کرکے لاگو کرنا چاہتی ہے۔ ایسی سرکار کیخلاف اور اور آئین مخالف ایکٹ کے خلاف دیش کی ساری عوام کو احتجاج کرنا چاہیے ،اس کے خلاف کھڑے ہونا چاہیے ۔ ریلی میں جناب سدھیر شرما بھاگلپور،جناب انل کمار مانوادھکار منچ بھاگلپور جناب وکرانت کمار ادھیکش مانوادھکار بھاگلپور ، جناب ولکشن رویداس پروکٹر ٹی ایم بی یو ، جناب رنکو یادو آؤں سماج نیائے آندولن بہار جناب مکیش انجینئر صاحب، جناب مفتی خورشید انور صاحب ،جناب مولانا غلام رسول صاحب جناب مفتی الیاس صاحب صاحب جناب ارشاد فتح پوری صاحب جناب افروز سلیمی صاحب جناب سدامہ پرساد سنگھ جناب گریش پاسوان صاحب اور بہت سے ہندو مسلم بھائیوں نے اپنا بھاشن دیا،اجلاس کے انعقاد کے لئےجناب مولانا اسامہ صاحب جناب غلام ربانی جناب مکھیا منظر صاحب جناب ڈاکٹر ریاض صاحب جناب مفتی خلیل صاحب ، مدرسہ سلیمانیہ سنہولہ ہاٹ کے اساتذہ کرام اور بہت سارے لوگوں نے ہر طرح کا تعاون کیا خاص طور سے اطراف کے نوجوانوں نے بہت تعاون کیا ،سب بہت شکریہ کے مستحق ہیں، اجلاس میں نظامت کے فرائض مفتی خلیل احمد نے انجام دیے ، احتجاجی اجلاس کے بعد پرسکون ریلی نکالی گئی اور بلاک میں سی او کو میمورنڈم دیا گیا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: