اہم خبریں

شب برات میں‌آتش بازی اور غیر اسلامی رسوم کے پرہیز کریں: جمعیۃ علماء ضلع فیروزآباد کی اپیل

بتاریخ 22مارچ 2021 ء کو مسجد میوہ فروشان میں
جمعیۃ علماء ضلع فیروزآباد کی جانب سے ایک پریس کانفرنس کا انعقاد کیا گیا
جس کی صدارت حضرت مولانا محمد شفیع صاحب قاسمی امام عیدگاہ نے فرمائی اس موقع پر
علمائے کرام نے تمام مسلمانوں سے اپیل کی کہ آئندہ 28 مارچ دن اتوار کو شعبان کے مہینے کی 14 تاریخ ہوگی۔
جس میں شب برات ہوتی ہے ، اس رات کو مسلمان عبادت کرکے اور اللہ کو یادکرکےدعا مانگ کر گزارتے ہیں اور 15 شعبان کو صبح روزہ رکھتے ہیں ، یہ رات بہت ذیادہ فضیلت اور ثواب کمانے اور گناہوں سے چھٹکارا حاصل کرنے کی رات ہے ، لیکن کچھ نا سمجھ لوگ نا سمجھی کی وجہ سے کچھ غلطیاں بھی کرتے ہیں
تو اسلئے اس مبارک رات میں ان غلطیوں کو نہ کیا جائے
اس بارے میں ، مولانا شفیع قاسمی نے کہا کہ سبھی ذمہ دار اور باشعور افراد اپنے اپنے علاقوں میں اپنے بچوں کو اس بات سے روکیں کہ وہ آتشبازی نہ کریں ۔نہ پٹاخے وغیرہ چلائیں اور نہ دوسروں کو ایسا کرنے کی اجازت دیں ، یہ بہت بڑا گناہ ہےاور پیسہ کی بھی بربادی ہے
اسلئے سبھی مسلمان اس مبارک رات میں آتش بازی اوپٹاخے چلانےسے پوری طرح بچیں اور پرہیز کریں ۔
جمعیت علماء ہند کے ضلع صدر مفتی تنویر احمد قاسمی نے
کہا کہ یہ رات عبادت کی ہے ، اس رات کو صرف عبادت میں ہی گزارنا چاہئے
سڑکوں پر گھومتے ہوئے اپنا وقت ضائع نہ کریں،بلکہ نفلی عبادت ہے اسلئے ہو سکے تو زیادہ حصہ عبادت کا اپنے گھروں میں ہی ادا کریں
جمعیت علمائے ہند کے ضلع جنرل سکریٹری مفتی قاسم رضی قاسمی نے خاص طور پر اس بات پر زور دیاہے کہ اسی تاریخ کو
برادران وطن کا ہولی کاتہواربھی ہونے والا ہے اور ہم سبھی بھارت کے رہنے والے ہمیشہ سے ایک دوسرے کے ساتھ مل جل کر رہتے ہیں ایک دوسرے کا احترام کرتے ہیں ایک دوسرے کی خوشیوں میں شریک رہتے ہیں
اسلئےاس موقع پر ، اس بات کا بھی خیال رکھا جائے کہ جو حضرات رات کوقبرستان جاتے ہیں تو اپنےطورپراس بات کی پوری کوشش کریں کہ برادران وطن کوہم سے یاہمارے کسی عمل سے کوئی تکلیف ہو۔
اورنہ ہم خوداپنے آپ کو کسی تکلیف اور پریشانی میں ڈالیں ، عبادات اللہ کو راضی کرنے اور اللہ کو خوش کرنے کا نام ہے۔
اور مخلوق کو تکلیف پہونچانا عبادت نہیں ہے دعا
جمعیت علماء ہند کے شہرجنرل سکریٹری مفتی حذیفہ نعمانی نے کہا کہ اس رات میں بہت سارے لوگ اس قبرستان بھی جاتے ہیں ، حالانکہ قبرستان جاناکوئی ضروری نہیں ہے ، گھر سے بھی ایصال ثواب کیا جاسکتا ہے ۔
لیکن اگر کسی کو جانا ہی ہے تو بھیڑ نہ لگائیں ، راستوں پر کھڑے نہ ہوں
اور کسی بھی جگہ غیر ضروری بھیڑ نہ کریں
مولانا الیاس مظاہری نے کہاکہ ابھی کورونا کی بیماری ہمارے ملک سے ختم نہیں ہوئی ہے ، اسلئے اس بات کابھی خیال رکھیں اور احتیاط کے لئے جو چیزیں ضروری ہیں انکو اختیار کریں ۔
مثال کے طور پر ، ہجوم سے پرہیز کریں ، اس سے بچیں اور زیادہ سے زیادہ وقت نماز میں گزاریں اور صبح کا روزہ رکھیں کیونکہ یہ روزہ اور یہ عبادت رمضان کی تیاری کے لئے ہے۔

اسی لئے تمام علمائے کرام ا نے اس بات پر خصوصی توجہ دلائی شب برات کے موقع پر کوئی ایسا کام نہ کریں جو شریعت کے خلاف ہو
اسلام کے خلاف ہو
یا اس سے دوسروں کو تکلیف ہوتی ہے
جسکی تفصیل آپکے سامنے آچکی ہے
ہم سب اپنے بھائیوں سے اپیل کرتے ہیں کہ اپنے عمل سےیہ پیغام دیں کہ اسلام ہمیشہ سے امن پسند ہے امن کو پسند کرتا ہے
اور ہم خود بھی امن پسند کرتے ہیں ، یہی اسلام کا اصل سبق ہے ، لہذا خود بھی ان باتوں پر عمل کریں اور دوسروں کو بھی پہنچائیں اس موقع پر م ، مولانا وصی مکرم ، حافظ شاہد ، حافظ شکیل ، مولانا مجیب الحق ، حافظ منظر حافظ شائق عبدالرزاق وغیرموجود رہے

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: