اہم خبریں

مدرسہ حسینیہ تجوید القرآن دگھی میں تکمیل حفظ قرآن کی مناسبت سے پروگرام کا انعقاد

گڈا جھارکھنڈ

مدرسہ حسینیہ تجوید القرآن دگھی میں تکمیل حفظ قرآن کی مناسبت سے ایک پروگرام کا انعقاد عمل میں آیا، اس پروگرام کی صدارت مولانا ادریس صاحب سابق پرنسپل مدرسہ ہذا نے فرمائی جبکہ نظامت کے فرائض مفتی سفیان ظفر قاسمی نے انجام دیئے. پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے امارت شرعیہ ضلع گڈا کے قاضی مولانا شفیق صاحب قاسمی نے فرمایا کہ قرآن کی حفاظت کی ذمہ داری اللہ تعالیٰ نے لی ہے اس لیے چند سرپھرے لوگوں کے قرآن کے خلاف بھونکنے سے قرآن کا کچھ بگڑنے والا نہیں، ہاں ایسا کرکے وہ اپنی عاقبت تو خراب کر ہی رہے ہیں ان کو دنیا میں بھی رسوائی کے سوا کچھ ہاتھ آنے والا نہیں ہے. حفظ مکمّل کرنے والے طلبہ کا آخری سبق مولانا محمد نعمان مظاہری سین پور، صدرِ رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ ضلع گڈا و جنرل سیکرٹری جمعیۃ علماء ضلع گڈا نے پڑھا یا، اس موقع پر انھوں نے ان طلبہ کو نصیحت کرتے ہوئے کہا کہ حفظ قرآن کے بعد اب آپ کی دو ذمہ داری ہے ایک تو یہ کہ تلاوت کا ہمیشہ معمول رہے اور دوسری بات یہ کہ قرآن پر عمل ہو، مولانا قمر الزماں ندوی استاد مدرسہ نور الاسلام کنڈہ پرتاپ گڑھ نے اپنے خطاب میں کہا کہ مسلمانوں کے لئے صرف قرآن کی تلاوت ہی کافی نہیں بلکہ قرآن فہمی بھی ضروری ہے،

ان کے علاوہ کئی اور علماء کرام نے خطاب کیا جن میں مولانا رئیس مظاہری صدر مدرس جامعہ اسلامیہ سین پور مولانا سعد الدین مکتب تحفیظ القرآن دگھی، الحاج مولانا نجم الحسن امام و خطیب جامع مسجد دگھی، مولانا عبد الحفیظ ،اور جناب محمد فتح صاحب ممبر پنچایت سمیتی کے نام بطور خاص قابل ذکر ہیں، اخیر صدر مجلس مولانا ادریس صاحب کی دعا پر مجلس کا اختتام ہوا، ابتداء میں مدرسہ حسینیہ تجوید القرآن کے طلبہ کا دلچسپ پروگرام ہوا،

واضح رہے کہ مدرسہ ہذا کے استاد قاری ظفر صاحب کے پاس پڑھنے والے جن سات طلبہ نے حفظ قرآن مکمل کرنے کی سعادت حاصل کی، ان کے نام یہ ہیں محمد اسحاق مال پرتاپور، محمد صدیق مدن شاہی صاحب گنج، محمد حسن، مال پرتاپور محمد شاہد مال پرتاپور، عبد السلام گوری چک، محمد عادل دگھی، محمد اسجد مال پرتاپور . اس پروگرام میں حافظ محمد غفران استاد مدرسہ نظامیہ دگھی، مولانا زین العابدین سین پور ، مولانا مصعب ندوی محمد ثاقب، محمد سلمان ریاض،حافظ عبد الستار گوری چک، حافظ پرویز مال پرتاپور، حافظ نذیر مال پرتا پور، مفتی نور الہدی ، محمد بابر محمد ذاکر وغیرہ وغیرہ موجود تھے

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: