مضامین

میرے کرم فرماجناب ماسٹرتمیزالدینؒ صاحب انجنا ؒ

مولانا ثمیر الدین قاسمی انگلینڈ

ولادت1921ء B.A. Bed.

ناچیزسن شعورکوپہنچااورپڑھنے لکھنے کاکچھ سدھ بدھ ہواتومیرے کر مفرما ماسٹر تمیزالدین صاحب ہمیشہ مجھے عیدگاہ فیض اللہ انجناپرتقریرکرنے کے لئے کھڑاکردیاکرتے تھے،چونکہ الاؤ نسروہی ہوتے تھے اسلئے میری طبیعت نہیں بھی چاہتی تب بھی وہ نام پکار کراصرار کرتے،بعدمیں یہ اصرار اتنابڑھاکہ استاذمحترم قاری سلامت اللہ صاحب نیانگری امام عیدگاہ فیض اللہ کے وصال کے بعد مجھے باضابطہ عیدگاہ کاامام منتخب کرلیا گیا اوراسمیں زیادہ اصرارماسٹرتمیزالدین صاحب ہی کاتھا۔وہ آج بھی مجھے ملتے ہیں توشفقت ومحبت،یگانگت وہمدردی کادریابہانے لگتے ہیں اوربڑھاپے اورامراض کے تمام غموں کوبھول کرمچلنے لگتے ہیں،اسکے صلے میں کریم نکتہ نوازانکواجرعظیم سے نوازے،آمین
بی،اے پاس کرنے کے بعدوہ 1946ء میں پرسامڈل اسکول میں ہیڈماسٹرہوئے وہاں رہکر1962 تک پرساہائی اسکول کے تمام ترقیاتی پروگرام میں زبردست حصہ لیتے رہے بلکہ ہیڈماشٹرکی غیبوبت میں موصوف ہی آفس کاکام انجام دیتے۔
1962 سے ہائی اسکول پرسامیں باضابطہ استاذمقررہوئے اورماسٹرمجیب الحق سیوانی صاحب کے استعفاء کے بعد1970ء سے کچھ وقفے کے ساتھ 1980ء تک ہائی اسکول کے ہیڈماسٹررہے،تعلیمی ہویاتہذیبی،تعمیری ہویامالی فراہمی ماسٹرمجیب الحق کے زمانے میں آپ ان تمام پروگراموں کوبروئے کارلانے برابرکے شریک رہے ہیں بلکہ عملہ کوآپکے جوش وخروش سے کام کرنے میں بڑی مددملی ہے۔1980ء میں آپ اسی اسکول سے ریٹائر ہوئے۔
ملت کالج پرساکی تحریک کے وقت توآپکے عزم وارادے میں آبشارکاشوراوردریاکی سی روانی بلکہ طغیانی تھی،آپ خوداہل شوریٰ کومدعوکرتے انکے اتقبال کے لئے تمام انتظار کرتے اورکالج کے نقشے اورخاکے کوتیارکرکے ان حضرات کے سامنے پیش کرتے،کالج میں کس طرح باغ وبہار آئے گا،اسکے تخمینی اخراجات کیاہونگے یہ سب خدوخال آپ ہی کاتراشیدہ ہے مالی فراہمی کے سلسلے میں ہرگاؤں کے لئے جووفدکی تشکیل ہوئی آپ اسمیں بھی کلیدی کردارکے حامل رہے ہیں بلکہ بڑھ چڑھ کرحصہ لیاہے،آپ کی رائے کابہت وزن تھا اورجگہ آپکاپلہ بھاری رہاہے۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: