غزل

وقت نازک ہے مچلنا چھوڑ دو

از قلم افتخار حسین احسن.
رابطہ نمبر.6202288565

وقت نازک ہے مچلنا چھوڑدو.
ظالموں کے ساتھ چلنا چھوڑدو.

زندگی سے آپ کو گر پیار ہے.
بے سبب گھر سے نکلنا چھوڑدو.

حکم ہے جب مسجدوں میں دو اذاں.
پھر اسے خود سے بدلنا چھوڑدو.

آنہ جاے حق تعالی کا عذاب.
ان غریبوں کو کچلنا چھوڑدو.

فیصلہ ٹلتا نہیں تقدیر کا.
پھر کف افسوس ملنا چھوڑدو.

دیکھکر دولت امیروں کی میاں.
موم کے جیسے پگھلنا چھوڑدو.

ہورہی ہیں دشمنوں کی سازشیں.
اس لیے احسن ٹہلنا چھوڑدو.
……….

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: