اہم خبریں

کالا قانون واپس لو کے نعروں سے گونج اٹھا مہگاواں

گڈا ضلع کے مہگاواں بلاک میں سی اے اے اور این آر سی کے خلاف زبردست مظاہرہ

گڈا جھارکھنڈ/ رپورٹ : محمد سفیان القاسمی ایڈیٹر جہازی میڈیا جھارکھنڈ

11 جنوری کو ضلع گڈا کے مہگاواں بلاک میں سی اے اے، این آر سی اور این پی آر کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ ہوا. طے شدہ پروگرام کے مطابق لوگ نو بجے سے ہی موہارہ میدان کیچوا چوک میں جمع ہونا شروع ہوگئے اور 11 بجے وہاں سے جلوس کی شکل میں لوگ نعرہ لگاتے ہوئے لال میدان کی طرف نکل پڑے، ہاتھوں میں ترنگا جھنڈا اور بینر و تختیاں تھیں، جن میں اس قسم کے نعرے لکھے ہوءے تھے، بھارت دیش کے چار سپاہی، ہندو مسلم سکھ عیسائی،، CAA واپس لو،، ہم این آر سی اور این پی آر کا بائیکاٹ کرتے ہیں وغیرہ جبکہ سڑکوں پر زبردست بھیڑ اور فلک شگاف نعروں سے پورا مہگاواں گونج رہا تھا، اس طرح مہگاواں کے بیچ سے گزرتا ہوا یہ جلوس لال میدان پہنچا اور وہاں پر سیاسی، سماجی اور مذہبی شخصیات کا خطاب ہوا

مقررین نے واضح طور پر کہا کہ یہ این آر سی، این پی آر اور سی اے اے ہندوستان کے باشندوں کی توجہ اصل موضوع سے ہٹانے اور ہندو مسلم کو آپس میں لڑانے کی سازش کا ایک حصہ ہے اس لیے ہم اس سازش کو کبھی کامیاب نہیں ہونے دیں گے، مقررین نے کہا کہ ظالم حکومت کے خلاف لڑائی کا یہ اختتام نہیں بلکہ یہ آغاز ہے اور لوگوں کو اس کے لئے تیار رہنا پڑے گا جس پر حاضرین نے ہاتھ اٹھا کر اس کے لئے تیار رہنے کا عندیہ دیا، اس احتجاجی جلوس میں ہندو مسلم اور آدی واسی کا جم غفیر تھا، پروگرام مولانا محمد نعمان مظاہری کی صدارت میں ہوا جبکہ نظامت کے فرائض مولانا شمس پرویز مظاہری نے انجام دیئے، اس موقع پر مفتی سفیان ظفر قاسمی نے کالے قانون کو واپس لینے کے تعلق سے اپنی پر جوش نظم سنائی جس کی سامعین نے تحسین و تائید کی، سامعین سے خطاب کرنے والے مقررین میں سنجے یادو، محمد احتشام( سی پی ایم لیڈر) دنیش یادو نمائندہ دپیکا پانڈے، صادق وکیل، اشوک شاہ، رنجیت کمار بھیم آرمی، فرقان انصاری اور انوار الہدی وغیرہ تھے پردیپ یادو اور لوبین ہمریج کی طرف سے ان کے نمائندوں نے پیغام سنایا، اخیر میں مولانا محمد ریاض قاسمی نے سامعین، مہمانان کرام اور جلوس کے لئے محنت کرنے والوں کا شکریہ ادا کیا، پروگرام کے اختتام پر مفتی محمد اقبال قاسمی نے صدر جمہوریہ اور چیف جسٹس آف انڈیا کے نام میمورنڈم انو منڈل پہنچ کر ایس ڈی او کو سونپا

واضح رہے کہ اس جلوس میں مہگاواں بلاک کے علاوہ مہرما، ٹھاکر گنگٹی ،بسنت راءے اور گڈا سے ہندو مسلم اور آدی واسی لوگوں کا جم غفیر شریک تھا جس کی وجہ سے پورا لال میدان حاضرین سے بھرا ہوا تھا، اس موقع پر مولانا حامد الغازی مولانا سلیم الدین مظاہری، مولانا عبد العزیز قاسمی، مولانا عبد الستار، مولانا تاج الدین قاسمی، مولانا ثمیر الدین ،اقرار الحسن، اجے کمار، مفتی زاہد امان قاسمی مفتی نظام الدین قاسمی مولانا غفران اعظمی،یحییٰ صدیقی، محمد فیروز، پردیپ جی، عطاء الرحمن صدیقی محمد عرفان مولانا سرفراز قاسمی،انظر صاحب محمد عالمگیر ،وغیرہ وغیرہ شریک تھے

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close