اہم خبریں

کرہریا ،گڈا میں منعقد جلسہ سیرت النبی سے علماء کرام کا خطاب

حضور اکرم ص کی سیرت میں تمام مسائل کا حل ہے

منان کرہریا میں منعقد جلسہ سیرت النبی سے علماء کرام کا خطاب

گڈا ،جھارکھنڈ / رپورٹ :سفیان القاسمی
گڈا ضلع میں مہگاواں بلاک کے تحت واقع بستی منان کرہریا میں ایک عظیم الشان جلسہ ء سیرت النبی کا انعقاد عمل میں آیا ،اس جلسہ کی صدارت مولانا محمد ابراہیم صاحب امام عید گاہ کسمہرا نے فرمائی اور نظامت کے فرائض مفتی سفیان ظفر قاسمی استاد مدرسہ حسینیہ تجوید القرآن دگھی نے انجام دیئے، اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا خالد سیف اللہ غازی چترویدی نے کہا کہ حضور اکرم ص کی بعثت کی پیشن گوئی نہ صرف تمام آسمانی کتابوں میں ہے بلکہ باقی دوسرے مذاہب کی کتابوں مثلاً وید میں بھی آپ کی بعثت کی پیشین گوئی موجود ہے، انھوں نے کہا کہ حضور اکرم ص کی سیرت میں دنیا کے تمام مسائل کا حل موجود ہے، بس ضرورت اس بات کی ہے سیرت طیبہ سے ہم روشنی حاصل کرنے کی کوشش کریں.

مولانا محمد الیاس ثمر قاسمی ڈائریکٹر الفلاح پبلک اسکول کرما ہاٹ نے کہا کہ تعلیم کے حوالے سے سے دنیا کی تمام قومیں بیدار ہیں لیکن مسلمانوں کا عمومی حال یہ ہے کہ ابھی ابھی تعلیم پر توجہ نہیں ہے، انھوں نے کہا کہ مسلمانوں کو چاہیے کہ وہ معیاری دینی و عصری تعلیم کے لئے مراکز کا قیام عمل میں لائیں اور اپنے بچوں کو اعلی دینی تعلیم اور اعلی عصری تعلیم سے آراستہ کرنے کا ذہن بنائیں اور مفتی ارشاد قاسمی امام و خطیب عیدگاہ کرہریا نے گھریلو مسائل پر مغز خطاب کیا.

واضح رہے کہ بعد مغرب جامعۃ الصالحات کے طلبہ وطالبات کا دلچسپ پروگرام ہوا اور عشاء کے بعد باضابطہ اجلاس کا آغاز ہوا قاری مجیب الرحمن صاحب نے قرآن پاک کی کی تلاوت فرمائی، مداح رسول جناب مولانا شمیم اختر صاحب کوریانہ نے حضور اکرم ص کی شان اقدس میں نذرانہ عقیدت پیش کیا، ندیم سرور گڈاوی اور مولانا کلیم الدین نے بھی اپنی نظموں سے سامعین کو محفوظ کیا اس کے ساتھ ہی مولانا ضیاء الرحمن صادق شہزاد پوری اور مولانا رضاء الرحمن رضا شہزادپوری نے اپنے تازہ کلام سے مجلس میں تازگی پیدا کر دی. تقریباً ڈھائی بجے رات تک یہ پروگرام چلا. اخیر میں مولانا قاری اکرام صاحب مہتمم جامعۃ الصالحات منان کرہریا نے تمام سامعین کا شکریہ ادا کیا اور مولانا خالد سیف اللہ غازی چترویدی کی دعا پر اجلاس کا اختتام ہوا.

اس موقع پرسعودعلی وکیل صاحب، مولانا ھلال الدین صاحب، حافظ نثار احمد صاحب، مولانا مبارک حسین صاحب مہتمم مدرسہ عربیہ اسلامیہ خرد سانکھی ، مولانا نعمان صاحب مظاہری سین پور ،مولانا آصف صاحب مدنی چک، حافظ محمد عمران بیریا، مولانا فرقان صاحب قاسمی، حافظ نسیم، جناب اسلم آزاد شمسی، اکرام الحق وغیرہ وغیرہ موجود تھے

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: