غزل

کہانی پیار والفت کی سناتے ہیں جگر والے

از قلم افتخار حسین احسن.
رابطہ نمبر6202288565

کہانی پیار والفت کی سناتے ہیں جگر والے.

کوئ ناراض ہوجاے مناتے ہیں جگر والے.

سرورو شادمانی میں سبھی ہوجاتے ہیں شامل.

مصیبت کا علم سر پر اٹھاتے ہیں جگر والے.

نہیں دیتا ہے کوئ ساتھ دنیا کی عدالت میں.

کرونا؛میں قدم آگے بڑھاتے ہیں جگر والے.

نہیں ہے مالداروں کی کمی اس دار فانی میں.

یتیموں بے سہاروں کو کھلاتے ہیں جگر والے.

نہیں آسان ہے یہ لاڈلے بیٹے کے قاتل کو.

عدالت میں گلے اپنے لگاتے ہیں جگر والے.

نہیں ہے کھیل بچوں کا اسے اپنا بتادینا.

سدا دریاے الفت میں نہاتے ہیں جگر والے.

حقیقت ہے یہی اس میں نہیں ہے کوئ افسانہ.

گناہوں سے سدا دامن بچاتے ہیں جگر والے.

وہ ناداں خاک جانے گا میرے خواجہ کی عظمت کو.

کرامت ہر جگہ ان کی بتاتے ہیں جگر والے.

جواحسن شاعری کرنے لگا یہ دیکھکر منظر.

ہزاروں رنج میں آنسو چھپاتے ہیں جگر والے.
…………………………

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: