اہم خبریں

گروگرام میں توہین رسالت پر جمعیت برہم سٹی کمشنر سے فوری کارروائی کا مطالبہ

نئی دہلی: جمعیت علمائے ہند کے جنرل سکریٹری مولانا حکیم الدین قاسمی کی قیادت میں ایک مرکزی وفد نے گروگرام کے پولیس کمشنر کلا رام چندرن سے پولیس ہیڈ کوارٹر میں ملاقات کی اور صدر بازار علاقے میں بجرنگ دل اور وشو ہندو پریشد کا مشترکہ احتجاج میں لگائے گئے بھڑکاؤ نعرے،مسلمانوں (ملاؤں) کے قتل عام کی دھمکی اور توہین رسالت پر مبنی نعرے پر اپنے دکھ اور ناراضگی کا اظہار کیا

وفد نے کہا کہ گزشتہ سال تریپورہ میں پیغمبر اسلام کی توہین میں اسی طرح کے نعرے لگائے گئے تھے اور دہلی کے جنتر منتر پر مسلمانوں کے قتل عام کی دھمکیاں دی گئی تھیں۔اس واقعہ کا گروگرام میں دہرایا جانا بہت افسوسناک اور دل دہلا دینے والا ہے۔ بالخصوص پیغمبر اسلام کی شان میں گستاخی رک نہیں رہی ہے ۔ یہاں جو کچھ ہوا ہے وہ ہندستان کی تاریخ میں تریپورہ سے پہلے کبھی نہیں ہوا۔ ایسا گھناؤنا فعل آج تک کسی اجتماعی تنظیم نے نہیں کیا۔ اس کی وجہ صرف یہ ہے کہ پولیس انتظامیہ اور قانون نافذ کرنے والے ادارے ایسے معاملات پر کارروائی نہیں کرتے۔ ہم آپ سے توقع کرتے ہیں کہ اس معاملے کو سنجیدگی سے لیں گی، مجرموں کے خلاف سخت کارروائی کریں گی تاکہ اس طرح کے واقعات سے ملک میں بدامنی پیدا نہ ہو۔

سٹی کمشنر نے جواب دیا کہ ان کے خلاف پہلے ہی مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ ایسے لوگوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ اس موقع پر جمعیت کے وفد نے ڈپٹی کمشنر پولیس سے بھی ملاقات کی۔

اس کے بعد جمعیت علمائے ہند کے وفد نے صدر بازار میں واقع جامع مسجد کا بھی دورہ کیا جس میں بدھ کو فرقہ پرست عناصر کی طرف سے مظاہرہ کیا گیاتھا. مسجد کے بالکل قریب مسلمانوں اور پیغمبر اسلام کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی تھی اور آس پاس کے دکانداروں کے خلاف نازیبا کلمات کہے گئے تھے۔ جمعیت علمائے ہند کے جنرل سکریٹری مولانا حکیم الدین قاسمی نے وہاں امن و سکون کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ جمعیت علمائے ہند کے صدر مولانا محمود اسعد مدنی پہلے ہی توہین رسالت کے خلاف سپریم کورٹ میں عرضی داخل کر چکے ہیں۔ ، جس کی سماعت رواں ماہ ہونے والی ہے۔

جمعیت علمائے ہند کے وفد میں جنرل سکریٹری کے علاوہ سپریم کورٹ کے ایڈوکیٹ ایم نور اللہ، جمعیت علمائے ہند کے سینئر کنوینر ایم جی قاسمی، جمعیت علمائے گروگرام کے صدر مولانا مفتی سلیم بنارسی شامل ہیں۔ ان کے علاوہ جمعیت علمائے ہندسے مولانا محمد یاسین جہازی معتمد شعبہ مرکز دعوت اسلام، جمعیت علمائے ہند دفتر کے حاجی محمد مبشر موجود تھے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
%d bloggers like this: