اہم خبریں

گڈا اسمبلی حلقہ کی سیاسی اور سماجی شخصیات کی ہیمینت سورین سے ملاقات

تعلیم، صحت اور آبپاشی نظام جیسے علاقے کے مخصوص مسائل کو رکھنے کی کوشش

گڈا اسمبلی حلقے کے دانشوروں پر مشتمل ایک وفد نے مورخہ 10/دسمبر 2019 کو جھارکھنڈ مکتی مورچا (J. M. M) کے سپریمو لیڈر ہیمینت سورین سے ان کی رہائش گاہ واقع دمکا میں جاکر ملاقات کی اور علاقے کے مخصوص مسائل پر تبادلہ خیال کرنے کی کوشش کی . وفد نے سابق جھارکھنڈ چیف منسٹر کے سامنے ایک طرف جہاں تعلیمی ڈیٹا پیش کرتے ہوئے علاقے کی زبوں حالی سے آگاہ کرانے کا ایجنڈا بنایا وہیں دوسری طرف صحت اور آب پاشی کا کوئی نظام نہ ہونے کی وجہ سے بار بار سکھاڑ سے جوجھ رہے کسانوں کے مسائل کو سامنے رکھنے کی تجویز بنائی . وفد نے اپنے مطالبہ میں یہ رکھا تھا کہ اگر 23/دسمبر 2019 کو ووٹ شماری کے دن ان کی سرکار بنتی ہے تو اس علاقے اور علاقے کے مخصوص مسائل پر خصوصی توجہ دے .
لیکن الیکشن کی وجہ سے وفد کو کافی وقت نہیں دے پائے اور ارجنٹ ایک جگہ کا سفر درپیش ہونے کی وجہ سے رسمی ملاقات نہ ہو سکی اور تفصیلی گفتگو کے لیے بعد میں وقت دینے کی بات کہی. تاہم وفد علاقے کے مسائل کو پارٹی لیڈر تک پہنچانے میں کامیاب رہا.

معلومات کے لیے عرض کردیں کہ گڈا اسمبلی حلقہ میں گٹھ بندھن سے سنجیے یادوں امید وار ہیں جنھیں لالٹین چھاپ والی پارٹی نے ٹکٹ دیا ہے. جھارکھنڈ میں کانگریس جے ایم ایم اور آر جے ڈی نے الائنس کیا ہے جس میں 43 سیٹوں پے پر جے ایم ایم 7 سیٹوں پر راجد اوربقیہ دیگر سےکانگریس لڑ رہی ہے 

وفد میں مفتی محمد نظام الدین قاسمی سکریٹری جمعیت علمائے بسنت رائے،مولانا سرفراز قاسمی سانچپور سکریٹری، مولانا شفیق صاحب سانکھی، مولانا احمد حسین پرسیہ، جناب توقیر عالم مہیلا، مولانا عبد الحنان سانکھی جناب محسن سانکھی، جناب پرمود کاپری ہیڈ ماسٹر گرل ہائی اسکول موتیا اور محمد یاسین جہازی کے نام شامل ہیں. اس وفد کی قیادت جناب ڈاکٹر محمد نذیر الدین پرنسپل مولانا ابوالکلام آزاد انٹر کالج بسنت رائے نے کی.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: