غزل

یہ زباں مدح آقا کے قابل رہے

ازقلم افتخارحسین احسن.
رابطہ نمبر.6202288565.

یہ زباں مدح آقا کے قابل رہے

ایک لمحہ بھی اس سے نہ غافل رہے.

کیسے ممکن ہو مجھکو بتائے کوئ.

قلب مومن میں حق اور باطل رہے.

قوم مسلم کو ہو فکر اس بات کی.

کوئ بچہ ہمارا نہ جاہل رہے.

مسلکوں کی لڑائ میں ہم بٹ گیے.

لٹ گیا قافلہ لوگ غافل رہے.

ہے ضروری بہت پرفتن دور میں.

دین اسلام گھر گھر میں کلامل رہے.

رب کے در بارمیں جو جھکاتا ہو سر.

زیب دیتا نہیں ہے وہ کاہل رہے.

اس قدر زخم اس نے دیا ہے ہمیں

عمر بھر تیر وترکش سے گھائل رہے.

اپنی مسجد کا اس کو بناؤ امام.

سنت مصطفی پر جو عامل رہے.

حق تعالی کا قرآں میں فرمان ہے.

کوئ محروم در سے نہ سائل رہے.

ہے یہی آرزوحق کے خاطر مروں.

نام میرا شہیدوں میں شامل رہے.

دیجئے اس طرح اس کو احسن جواب
جوہے دشمن سداتیرا قائل رہے.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

یہ بھی پڑھیں
Close
Back to top button
Close
%d bloggers like this: