اہم خبریں

644 مظلوم تامل ناڈو جماعتی جمعیت کی کوششوں سے رہا ہوکر اسپیشل ٹرین سے وطن کے لیے روانہ

جمعیۃ علماء ہندکے جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی کی کوششوں سے ان کی چھٹی، سفر ی اجازت نامہ سے لے کر ٹرین تک کا سفر ہواآسان، جمعیۃ علماء کے کارکنان نے ان کو اسٹیشن تک پہنچایا، سفر میں ان سبھی کے لیے افطار و عشائیہ وغیرہ کا نظم کیا۔ مولانا محمود مدنی کا شکریہ ادا کیا

نئی دہلی، 16/مئی کورنٹائن سینٹر س کی مشقتوں اور ناکردہ گناہوں کی لعنت و ملامت جھیل رہے تمل ناڈو کے644 جماعتیوں کو آج دوپہر تین بجے پرانی دہلی ریلوے اسٹیشن سے خصوصی ٹرین کے ذریعہ ترچراپلی(تمل ناڈو) واپس بھیجا گیا۔بتادیں کہ مرکز کا معاملہ سامنے آنے کے بعد دوہزار سے زائد لوگوں کو وہاں سے نکال کر لایا گیا تھا جو یا تو کورینٹائن سینٹر س میں رکھے گئے یا ہسپتال میں داخل کئے گئے۔ڈیرھ ماہ بعد دہلی نے سرکار نے سبھی ضلعی انتظامیہ کو ہدایت دی تھی کہ تبلیغی جماعت کے ممبر کو کورنٹائن سینٹرس سے چھوڑیں، سرکار کی طرف سے اس آپریشن کی ذمہ داری نوڈل افسر شری سنیل بینوال نے ادا کی۔ان 644میں سے605 /افراد دہلی میں محبوس تھے جب کہ12، نوح،8، سہارنپور، 10، سنبھل اور 9، بلند شہر میں تھے۔

جس وقت ان لوگوں کو اسٹیشن سے روانہ کیا جارہا تھا وہاں جمعیۃ علماء ہند کے خدام وکارکنان اور جمعیۃ یوتھ کلب کے نوجوان ان کی خدمت کے لیے موجود تھے۔جانے سے قبل تمل لوگوں نے ہاتھ اٹھاکر جمعیۃ علماء ہند کے جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی کا شکریہ ادا کیا جن کی کوششوں سے عید سے قبل ا ن کے لیے وطن جانا آسان ہو سکا۔ جمعیۃ علما ء ہند کی طرف سے ان سبھی جماعتیوں کے لیے افطار، عشائیہ، سحری اور پانی کا مکمل نظم کیا گیا۔جمعیۃ یوتھ کلب کے نوجوانوں نے سبھی سیٹوں پر کھانے کی چیزیں بالترتیب پہنچائی۔

ازیں قبل ان سبھی جماعتی احباب کے لیے سفری اجازت نامہ، فوری سواری کاانتظام اور پولس انتظامیہ کے تعاون سے ان کو مختلف سینٹروں سے پرانی دہلی پہنچانے کا عمل بھی جمعیۃ کی ٹیم نے انجام دیا، اس کے لیے باضابطہ مولانا حکیم الدین قاسمی سکریٹری جمعیۃ علماء ہند کی سربراہی میں ایک وہائٹس اپ گروپ بھی تشکیل دیا گیا ہے تاکہ جماعتی احباب کے لیے الگ الگ جگہوں سے کا م کرنے والوں کو ایک ساتھ جوڑا جا سکے۔رات سے ہی جمعیۃ کے احباب ایک دوسرے سے مسلسل رابطہ میں تھے اور ان کی نگرانی میں سبھی جماعتی احباب کو صبح سات بجے امبیڈکر اسٹیڈیم جمع کیا گیا، وہاں کارروائی ہونے کے بعد ان کو پرانی دہلی لایا گیا۔ ٹرین اپنے مقررہ وقت سے ایک گھنٹہ بعد تین بج کرتیرہ منٹ پر روانہ ہوئی، جو28 گھنٹے کے سفر کے بعد چینئی ہوتے ترچراپلی (ترچی) پہنچے گی۔مولانا حکیم الدین قاسمی نے بتایا کہ جمعیۃ علماء تامل ناڈو کے ذمہ داران وکارکنان ان کا چینئی میں بھی استقبال کریں گے،جمعیۃ علماء تامل ناڈو کے جن لوگوں نے اس معاملے میں ہر طرح کی مدد کی ہے ان میں مولانا منصور کاشفی،مولانا خطیب احمد سعید، حاجی حسن چینئی، ڈاکٹر امجد، مولانا عبدالحمید، حاجی نثار احمدکے نام قابل ذکر ہیں۔ یہ جمعیۃ علماء ہند کے خدام کے لیے سعادت کی بات ہے کہ وہ اپنے جماعتی بھائیوں کی خدمت کررہے ہیں، ناظم عمومی مولانا محمود مدنی صاحب نے ان کی روانگی پر سرکار و انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا ہے اور دعاگو ہیں کہ اللہ رب العزت ان کو صحیح سالم اپنے وطن تک پہنچائیں۔ مولانا حکیم الدین نے بتایا کہ پرانی دہلی ریلوے اسٹیشن کے اندر جاکرجمعیۃ کی ٹیم نے ان کو روانہ کیا، روانگی کے وقت مولانا جمال قاسمی،مولانا غیو قاسمی، مولانا عرفان قاسمی، مولانا یسین جہازی، مولانا ضیاء اللہ قاسمی، مولانا جاوید صدیقی، قاری احرار،حاجی فرمان اور ان کی ٹیم،حاجی ناصر، یوتھ کلب کے ماسٹرس وعظ امن، مولانا رفاقت، مولانا طالب، ماسٹر آصف،عفان وغیرہ موجود تھے.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
%d bloggers like this: